شمالی کوریا کے ایٹمی حملے کا خطرہ ٹل گیا ، اب امریکی چین کی نیند سوسکتے ہیں ، صدر ٹرمپ

شمالی کوریا کے ایٹمی حملے کا خطرہ ٹل گیا ، اب امریکی چین کی نیند سوسکتے ہیں ، ...

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہاہے کہ اب شمالی کوریا کی طرف سے امریکہ یا اس کے اتحادیوں پر ایٹمی حملے کا کوئی خطرہ باقی نہیں رہا۔ انہوں نے سنگاپور میں شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ ان کے ساتھ تاریخی ملاقات کرنے کے بعد واشنگٹن میں اس پر تبصرہ کرتے ہوئے اپنے تازہ پیغام میں یہ تبصرہ کیا ہے صدر ٹرمپ کہتے ہیں کہ حملے کا خطرہ ٹل گیا ہے اور اب امریکی عوام چین کی نیند سو سکتے ہیں ۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ صدارت کا منصب سنبھالنے کے وقت کے مقابلے پر اب وہ خود کو کہیں زیادہ محفوظ سمجھ رہے ہیں۔ یادرہے سنگاپور کانفرنس کے اعلامیے کے مطابق شمالی کوریا کے سربراہ نے جزیزہ نماکوریا کو جوہری ہتھیاروں سے پاک کرنے پر آمادگی ظاہر کی ہے تاہم طے شدہ دستاویز میں اس بات کا کوئی ذکر نہیں ہے کہ یہ جوہری ہتھیاروں کب اور کیسے تلف ہوں گے اور انہیں تلف کرنے کے عمل کی تصدیق کیسے کی جائے گی۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ شمالی کوریا کے سربراہ سے ملاقات ایک بہت ہی مثبت اور دلچسپ تجربہ ہے انہوں نے نیک نیتی سے مذاکرات کئے ہیں اور یہ سلسلہ جاری رہے گا ۔اس دوران ہم نے جنوبی کوریا کے ساتھ مل کر فوجی مشقیں معطل کرنے کا اعلان کرکے بھاری رقم کو بچالیا ۔ تاہم مبصرین نے معاہدے پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے مشترکہ اعلامیے میں شمالی کوریا سے واضح یقین دہانی حاصل نہیں کی اور نہ ہی جوہری ہتھیار تلف کرنے کا نظام الاوقات طے کیا ہے۔

ٹرمپ

مزید : علاقائی