پرویز مشرف نے سپریم کورت سے وطن واپسی کیلئے مہلت مانگ لی

پرویز مشرف نے سپریم کورت سے وطن واپسی کیلئے مہلت مانگ لی

 لاہور/اسلام آباد(نامہ نگار،مانیٹرنگ ڈیسک)سپریم کورٹ نے عدم حاضری پرجنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کا عبوری حکم واپس لیتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت تک کیلئے ملتوی کردی۔تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں 4 رکنی فل بنچ نے جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے ملک واپسی کے معاملے پر کیس کی سماعت کی ،جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے وکیل قمر افضل نے بنچ کو آگاہ کیا کہ پرویز مشرف نے عدالت میں پیش ہونے کیلئے وقت مانگا ہے، وکیل کے مطابق پرویز مشرف پاکستان آنے کا ارادہ رکھتے ہیں لیکن عید کی تعطیلات اور موجودہ حالات کی وجہ سے سفر نہیں کر سکتے۔سپریم کورٹ کے فل بنچ نے گزشتہ روز جنرل پرویز مشرف کو عدالت میں پیش ہونے کیلئے دوپہر 2بجے تک کی مہلت دی تھی لیکن سابق جنرل پرویز مشرف نے پیش ہونے کے بجائے مزید مہلت کی استدعا کر دی۔فل بنچ نے پرویز مشرف کے پیش نہ ہونے پر کاغذات نامزدگی منظور کرنے کی عبوری اجازت واپس لے لی۔عدالت نے پرویز مشرف کے ملک واپسی کے معاملے پر کارروائی غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کرتے ہوئے ہدایت کی کہ دوبارہ درخواست دینے پر کارروائی کی جائے گی۔دوسری جانب وزارت داخلہ کے ذرائع مطابق سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کا شناختی کارڈ بحال کردیاہے اور ان کے پاسپورٹ کی بحالی سے متعلق بھی غور کیاجارہا ہے۔

سپریم کورٹ/پرویز مشرف

مزید : صفحہ اول