نگران وزیراعظم ،آرمی چیف کو افغان صدر کا ٹیلی فون ،ملا فضل اللہ کے مارے جانے کی تصدیق کی

نگران وزیراعظم ،آرمی چیف کو افغان صدر کا ٹیلی فون ،ملا فضل اللہ کے مارے جانے ...
نگران وزیراعظم ،آرمی چیف کو افغان صدر کا ٹیلی فون ،ملا فضل اللہ کے مارے جانے کی تصدیق کی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن)نگران وزیر اعظم اورآرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو افغان صدرکا ٹیلی فون ،اشرف غنی نے جسٹس (ر) ناصر الملک اور جنر ل قمر جاوید باجوہ کو افغانستان میں ڈورن حملے سے ملا فضل اللہ کی ہلاکت سے آگاہ کیا ۔

آئی ایس پی آر سے جاری بیان کے مطابق افغان صدر اشرف غنی نے آرمی چیف جنر ل قمر جاوید باجوہ کی ٹیلی فون کرکے کالعدم تحریک طالبان کے سربراہ ملا فضل اللہ کی ہلاک بارے آگاہ کیا ۔ افغان صدر نے آرمی چیف کوبتایا کہ ملا فضل اللہ کی ہلاکت کنڑ میں ڈورن حملے میں ہوئی ۔آئی ایس پی آر کے مطابق ملا فضل اللہ 2009سے افغانستان میں چھپاہوا تھااور اس کی ہلاکت کے مثبت نتائج بر آمد ہونگے ۔ ملا فضل اللہ کی ہلاکت سے پاکستان کے کئی متاثرہ خاندانوں کوانصاف مل گیاہے ۔وہ اے پی ایس کے معصو م بچوں کے قتل میں بھی ملوث تھا ۔اشرف غنی نے نگران وزیر اعظم جسٹس (ر) ناصر الملک کو بھی فون کرکے ملا فضل اللہ کی ہلاکت کی تصدیق کی ۔ نگران وزیراعظم نے اطلاع دینے پر افغان صدر کا شکریہ ادا کیا ۔ اس موقع پر نگران وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ملا فضل کی ہلاکت دہشتگردی کے خلاف جنگ میں ایک اہم پیش رفت ہے ۔ وہ پاکستان کے عوام کا دشمن تھا ۔ انہوں نے کہا کہ ملا فضل اللہ افغانستان سے دہشتگردوں کی معاونت کرتا رہا ۔وہ سانحہ اے پی ایس کا بھی ذمہ دار تھا جس میں معصوم بچے شہید ہوئے ۔

مزید : اہم خبریں /قومی