تحقیقاتی کمیشن اقامہ رکھنے والوں کی بھی تحقیقات کرے گا، وزیرا عظم کا اعلان

تحقیقاتی کمیشن اقامہ رکھنے والوں کی بھی تحقیقات کرے گا، وزیرا عظم کا اعلان
تحقیقاتی کمیشن اقامہ رکھنے والوں کی بھی تحقیقات کرے گا، وزیرا عظم کا اعلان

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ تحقیقاتی کمیشن بہت جلد قائم کیا جائے گا جو اقامہ رکھنے والوں کی بھی تحقیقات کرے گا، پاکستان کی معیشت مستحکم ہوگئی ہے اور اب ٹیک آف کرے گی۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں وزیر اعظم عمران خان کو تحقیقاتی کمیشن پر بریفنگ دی گئی، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے بجٹ اور حکومتی اہداف سے متعلق وزیر اعظم کو آگاہ کیا ۔ جہانگیر ترین نے زراعت پالیسی سے متعلق پیشرفت اور چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے ٹیکس اصلاحات پر بریفنگ دی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ تحقیقاتی کمیشن کا مقصد 24 ہزار ارب روپے کے قرضوں کا حساب ہے ، یہ جلد قائم کیا جائے گا، تحقیقاتی کمیشن اقامہ رکھنے والوں کا حساب بھی کرے گا۔وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان کی معیشت مستحکم ہو چکی ہے اب وقت ہے معیشت ٹیک آف کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ عوام کو غربت کی لکیر سے اوپر لانا پی ٹی آئی کی اولین ترجیح ہے اسی لیے احساس پروگرام کا بجٹ 100 ارب سے بڑھا کر 191 ارب روپے تک لے گئے ہیں۔

اجلاس میں اپوزیشن رہنماﺅں کی گرفتاریوں پر بھی بات چیت ہوئی، وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ گرفتار ہونے والے این آر او کی تلاش میں ہیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی