اس سال حج مکمل ہو گا یا محدود، سعودی سربراہ کی طرف سے آج اعلان متوقع، 10ممالک پہلے ہی عازمین بھیجنے سے معذرت کر چکے

اس سال حج مکمل ہو گا یا محدود، سعودی سربراہ کی طرف سے آج اعلان متوقع، 10ممالک ...

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) حج 2020ء ہو گا؟ نہیں ہو گا؟ علامتی ہو گایا محدود ہو گا؟ صرف مقامی سعودی افراد کیلئے ہو گایادنیا بھر کے ممالک کے صرف وفود شامل ہو سکیں گے؟خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی طرف سے آج اعلان متوقع ہے۔کرونا کی وجہ سے 10 ممالک پہلے ہی حج محدود کرنے کی سفارش کیساتھ اپنے اپنے ممالک سے حاجی بھیجنے سے معذرت کر چکے ہیں۔سعودیہ میں حج آپریشن کی تکمیل کیساتھ ہی اگلے حج کی تیاریوں کا آغاز ہو جاتاہے اس سال ایسا نہیں ہو سکا مارچ سے کرونا کی وجہ سے لاک ڈاون اور کر فیو نافذ ہے۔عمرہ بھی معطل رہا۔ رمضان میں بھی عمرہ بند رہا ہے ابھی تک سعودیہ میں مسجد نبوی میں نمازوں کی اجازت دی گئی ہے روضہ رسول بند ہے خانہ کعبہ میں محدود نمازوں کا سلسلہ جاری ہے۔حج 2020ء کے لیے دنیا بھر کے ممالک کو تجاویز کے لیے جو ایس او پیز دیئے گئے تھے وہ قابل عمل نظر نہیں آتے۔ دنیا بھر کے ممالک سے آنے والی تجاویز اور مختلف سعودی وزارتوں کی طرف سے تیار کی گی سفارشات خادم حرمین شرفین تک پہنچا دی گئیں ہیں۔عالمی ادارہ صحت کی سفارشات بھی اس میں شامل ہیں۔ تمام تجاویز اور سفارشات کی روشنی میں آج اعلان متوقع ہے۔دوسری طرف سعودی عرب کے حکام نے پہلی بار رواں سال حج منسوخ کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔سعودی وزارت حج و عمرہ کے سینئر عہدیدار نے برطانوی اخبار کو بتایا کہ ملک میں کورونا وائرس کے کیسز ایک لاکھ سے زائد ہونے کے بعد حکام رواں سال حج منسوخ کرنے پر غور کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکام معاملے کا باریکی سے جائزہ لے رہے ہیں اور مختلف پہلوؤں پر غور کیا جارہا ہے، جبکہ باضابطہ فیصلہ ایک ہفتے کے اندر کر لیا جائے گ جلد متوقع ہے۔رپورٹ کے مطابق بعض حکام کا مشورہ ہے کہ حج کو منسوخ کردیا جائے جبکہ بعض حلقوں کی جانب سے تمام ممالک کو معمول کے کوٹے سے 20 فیصد کی اجازت دینے کا مشورہ دیا گیا ہے۔حج کو محدود کرنے سے سعودی عرب کی معیشت کو بڑے نقصان کا خطرہ ہے جبکہ کورونا وائرس کے باعث سعودی معیشت پہلے ہی شدید مشکلات سے دوچار ہے۔

حج اعلان

مزید :

صفحہ اول -