بھارت سرحدی تنازعات بڑھانے کے بجائے اپنے اندرونی معاملات پر توجہ دے: شاہ محمود قریشی

  بھارت سرحدی تنازعات بڑھانے کے بجائے اپنے اندرونی معاملات پر توجہ دے: شاہ ...

  

ملتان (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارت کی حکومت کو مشورہ دیا ہے کہ وہ 'توسیع پسندانہ قوم کی طرح برتاؤ' کرنے کے بجائے اپنے اندرونی معاملات پر توجہ دے۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی ٹوئٹس میں انہوں نے کہا کہ یہ وزیر اعظم نریندر مودی کی حکومت اور 'پہلے پڑوسی' کی پالیسی کے سلسلے میں مددگار ثابت ہوگی کہ وہ یہ سمجھ سکیں کہ پڑوسیوں کی نسبت بھارت کو اپنی نامناسب پالیسیوں، ناکامیوں اور فاشزم سے زیادہ خطرہ لاحق ہے۔شاہ محمود قریشی نے ہر پڑوسی کے ساتھ سرحدی تنازع کو بڑھانے پر بھی بھارت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔دریں اثناکرونا ریلیف ٹائیگر فورس کو یونین کونسل سطح پر متحرک کرنے کے فیصلے کے بعد وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اپنے حلقے کی یو سیز میں ٹائیگر فورس میدان میں اتارنے میں کامیاب ہو گئے۔، شاہ محمود نے اس سلسلے میں 30 یونین کونسلز میں ٹائیگر فورس کے 6 ہزار ممبرز کو تربیت دی۔شاہ محمود قریشی کی طرف سے ٹائیگر فورس کو گروپس میں تربیت دی گئی، انھوں نے ٹائیگر فورس سے کہیں ویڈیو لنک تو کہیں براہ راست خطاب کیا، فورس کے جوانوں کو یوٹیلیٹی اسٹورز، احساس مراکز، مارکیٹس، اسپتالوں، مساجد سمیت ہجوم والی ہر جگہ پر ڈیوٹی کی تربیت دی گئی۔ٹائیگر فورس کو اس بات کی تربیت دی گئی کہ کرونا سے خود کیسے بچیں اور لوگوں کو کیسے بچائیں، شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ٹائیگر فورس اسمارٹ لاک ڈاؤن میں ضرورت مندوں کی مدد کریں گے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ٹیلی کام کمپنیوں کے اعلیٰ حکام سے ملاقات کی جس میں وزارت خارجہ میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کو فروغ دینے کے حوالے سے خصوصی مشاورت کی گئی۔ ٹیلی کام کمپنیوں کے اعلیٰ حکام سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود نے کہا کہ کرونا عالمی وبائی چیلنج نے دنیا کو یکسر تبدیل کر کے رکھ دیا ہے آج دنیا بھر میں تمام اہم اجلاس ویڈیو لنک اور جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لاتے ہوئے منعقد کیے جا رہے ہیں۔ اس تیزی سے بدلتی ہوئی دنیا میں، آگے بڑھنے کیلئے ہمیں اپنے امور کی انجام دہی میں جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانا اور اس وبا کے مضمرات کو سامنے رکھتے ہوئے ہمیں اپنی آئندہ کی حکمت عملی اور لائحہ ء عمل کو وضع کرنا ہو گا۔وزیر خارجہ نے ٹیلی کام کمپنیوں کے نمائندگان کی طرف سے دی جانے والی آرا کو سراہتے ہوئے وزارت خارجہ آمد پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -