پی ٹی آئی حکومت کا بجٹ معاشی بد حالی اور بے روز گاری کا سونامی: سراج الحق

پی ٹی آئی حکومت کا بجٹ معاشی بد حالی اور بے روز گاری کا سونامی: سراج الحق

  

کراچی(این این آئی)امیرجماعت اسلامی پاکستان سینیٹرسراج الحق نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا میں کراچی پر بڑا دبا ہے،کراچی کو میگاسٹی کا درجہ دے کر مکمل اختیارات اور وسائل دیے جائیں تاکہ کورونا کی وبا اور دیگر مسائل حل کیے جاسکیں،وفاقی و صوبائی حکومتوں کاایک موقف نہ ہونے کی وجہ سے کورونا کو فائدہ اور عوام کو نقصان ہورہا ہے،ایک لاک ڈان حکومتی وزرا کی زبانوں پر بھی لگنا چاہیئے جنہوں نے کورونا کو بھی سیاست زدہ کردیا ہے،کورونا وائرس کے حوالے سے حکومتی اعداد وشمار مشکوک ہیں،حکومت کو دس کروڑ ماسک عوام میں مفت تقسیم کرنے چاہیئے تھے تاکہ عوام کو کچھ فائدہ ہوتا،پی ٹی آئی حکومت کا بجٹ معاشی بدحالی اور بے روزگاری کا سونامی ہے، بجٹ کے اعداد و شمار کا زمینی حقائق سے کوئی تعلق نہیں ہے،ملک میں میثاق جمہوریت تو بہت سے ہوئے لیکن اب حالات ہم سے ایک میثاق معیشت پر متفق ہونے کا تقاضہ کررہے ہیں،اس وقت بنیادی نوعیت کے اہم فیصلے کوئی ایک جماعت تنہا نہ کرسکتی ہے نہ کرنے چاہیئے،وقت کے تقاضوں کے مطابق اہم فیصلے کرنے میں ہم پہلے ہی خاصا وقت ضائع کرچکے ہیں مزید تاخیر کے متحمل نہیں ہوسکتے،بجٹ کے اعداد و شمار کبھی اہمیت کے حامل نہیں رہے کیونکہ انہیں پیش کرنے میں غلط بیانی اور مبالغہ آرائی سے کام لیا جاتا ہے اپنے معاشی فیصلے دوسروں کے حوالے کرنے کا نتیجہ یہ ہے کہ ہماری قومی آمدنی مسلسل کم ہورہی ہے۔بجٹ میں حکومت نے عوام اور ملکی مفادات کے بجائے صرف آئی ایم ایف کے مفادات کو مد نظر رکھا، ہم بجٹ کو مسترد کرتے ہیں،حکومت بجٹ پر نظر ثانی کرے،اپوزیشن کے ساتھ مل کر بجٹ کے حوالے سے مشترکہ مقف اپنائیں گے،پیپلز پارٹی، نواز لیگ اور جے یو آئی سے رابطے میں ہیں،موجودہ حکومت کا 22ماہ کا سفر خود اپنے اعلانا ت اور وعدوں کے برخلاف الٹا سفر ہے،اس حکومت کے آنے کے بعد ملکی معیشت اور عوام کی حالت زارمزید خراب ہوگئی ہے، کورونا کی وبا تو صرف ایک بہانہ ہے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے اتوار کے روز ادارہ نورحق میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر جماعت اسلامی کے مرکزی نائب امیر ڈاکٹر معراج الہدی صدیقی،کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن،نائب امیر ڈاکٹر اسامہ رضی،رکن سندھ اسمبلی و امیر ضلع جنوبی سید عبد الرشید،سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری اور دیگر بھی موجود تھے۔

سراج الحق

مزید :

صفحہ آخر -