ہنگو میں کورونا بے قابو،جاں بحق افراد کی تعداد 8 ہوگئی

  ہنگو میں کورونا بے قابو،جاں بحق افراد کی تعداد 8 ہوگئی

  

ہنگو(بیورورپورٹ)ضلع ہنگو میں کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز،جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 8ہو گئی،کوہاٹ ہسپتال میں جاں بحق علاقہ رائیسان سے تعلق رکھنے والے کو بھی ایس او پیز کے تحت سپردخاک کر دیا گیا، ضلع بھرمیں کرونا کیسز میں اضافے سے علاقے میں خوف و ہراس کاسماں ہے، بازاروں میں ایس او پیز کی خلاف ورزیوں پر انتظامیہ بے بس جبکہ عوام کی جانب سے بھی احتیاطی تدابیرمیں حکومت اور انتظامیہ کے ساتھ تعاون نہیں آرہا۔بازاروں میں رش کے باوجود ماسک نہ پہننے پر کوئی کاروائی نہیں ہوئی جبکہ مسافر فلائنگ کوچ اڈا میں بھی ایس او پیز کی دھجیاں اڑھائی جارہی ہے،مختلف علاقہ جات میں لوگ بیمار ہوتے ہی ہسپتال جانے سے گریز کرتے ہوئے اپنے گھروں میں رہنے کو ترجیح دیتے ہے۔ضلع ہنگو کے شہریوں کے اکثریت رائے کے مطابق کہ کرونا سے بچا ؤ کا و احد حل لاک ڈاون ہے۔ جوکہ عوام کے وسیع تر مفاد میں بہتر رہیگا۔محکمہ صحت ذرائع کے مطابق علاقہ شناوڑی کا رہائشی تاج محمد،نیاز مین،وارستہ کے رہائشی رحمن گل اور زوجہ نظیر محمد،شاہو وام کے رہائشی شاہ فقیر کی فوتگی کرونا وائرس سے ہوئی ہے۔ جنکو ضلعی انتظامیہ کے ہدایات پر ان تمام افراد کو ایس اوپیز کے مطابق دفنایا کیا گیا۔محکمہ صحت ذرائع نے مذیدکہاکہ فوت شدہ افراد میں کروناوائرس کی کچھ علامت موجود تھے۔جنکی ٹیسٹ بھی لیبارٹری کو بھیجوائی گئی ہے۔تاہم رزلٹ موصول نہیں ہوئیں۔محکمہ صحت کے مطابق گزشتہ روزرائیسان کا رہائشی بھی کرونا وائرس کے باعث کوہاٹ ہسپتال میں جاں بحق ہو ا جس کو بھی گزشتہ رات ایس او پیز کے تحت دفنا دیا گیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -