سابق وزیر کی کورونا سے موت پر مذاق اڑانے کے باعث خاتون لیکچرار گرفتار

سابق وزیر کی کورونا سے موت پر مذاق اڑانے کے باعث خاتون لیکچرار گرفتار
سابق وزیر کی کورونا سے موت پر مذاق اڑانے کے باعث خاتون لیکچرار گرفتار

  

ڈھاکہ (ڈیلی پاکستان آن لائن )بنگلہ دیش میں کورونا سے انتقال کر جانے والے سابق وزیر صحت کا مذاق اڑانے پر خاتون لیکچرار کو گرفتار کر لیا گیا ۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق واقعہ بنگلا دیش میں پیش آیا جہاں یونیورسٹی کی خاتون لیکچرار نے کورونا وائرس سے انتقال کرنے والے سابق وزیر صحت کی موت کا مذاق اڑیا اور وہ متنازع ڈیجیٹل سیکیورٹی قوانین کی خلاف ورزی کی مرتکب ہوئیں جس پر انہیں گرفتار کرلیا گیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق 28 سالہ خاتون لیکچرار منیرا کو سابق وزیر صحت محمد نسیم کی کورونا وائرس سے ہلاکت کے بعد ہفتے کے روز گرفتار کیا گیا۔

میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ خاتون لیکچرار نے سابق وزیر صحت کی موت پر تضحیک آمیز کمنٹس کیے اور مردہ شخص کا مذاق اڑایا جو وائرل ہوگئے جب کہ اس سے منفی تاثرات ابھارنے اور ملک کا تشخص خراب کرنے پر خاتون کو گرفتار کرلیا گیا۔تاہم بعد ازاں خاتون نے اپنے کمنٹس کو ڈیلیٹ کردیا اور اس پر معافی بھی مانگی۔

میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بنگلا دیش میں مارچ سے اب تک کورونا سے متعلق پروپیگنڈا پوسٹیں کرنے کے الزام میں 44 افراد کو گرفتار کیا گیا چکا ہے جس پر سماجی شخصیات کا کہنا ہے کہ بنگلادیش میں حکومت کورونا پر قابو نہ پانے پر تنقید کے بعد انٹرنیٹ قوانین کو استعمال کررہی ہے۔

واضح رہے کہ بنگلا دیش میں کورونا سے کئی معروف شخصیات انتقال کرگئی ہیں جن میں بزنس ٹائیکون، بیورو کریٹس اور ڈاکٹرز بھی شامل ہیں جب کہ ہفتے کے روز وزیراعظم کے اہم ساتھی اور وزیر مذہبی امور شیخ عبداللہ بھی وائرس سے انتقال کرگئے۔اس کے علاوہ وزیراعظم شیخ حسینہ واجد کی کابینہ کے کچھ ارکان بھی وائرس میں مبتلا ہیں۔بنگلادیش میں اب تک کورونا کے 87 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں اور 1100 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے۔

مزید :

بین الاقوامی -