لاہور کے بڑے ہسپتال میں حفاظتی اقدامات نہ ہونے پر ڈاکٹروں نے کورونا وارڈ میں ڈیوٹی سے انکار کردیا

لاہور کے بڑے ہسپتال میں حفاظتی اقدامات نہ ہونے پر ڈاکٹروں نے کورونا وارڈ میں ...
لاہور کے بڑے ہسپتال میں حفاظتی اقدامات نہ ہونے پر ڈاکٹروں نے کورونا وارڈ میں ڈیوٹی سے انکار کردیا

  

لاہور (خبر نگار)میو ہسپتال میں ڈاکٹروں نے حفاظتی اقدامات نہ ہونے پر کرونا وارڈز میں ڈیوٹی کرنے سے انکار کر دیا ،ہے۔۔ڈاکٹروں کی جانب سے انکاری کے بعد محکمہ صحت میں ہلچل مچ گئی ہے۔ محکمہ صحت نے دیگر ڈاکٹروں کو تعینات کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

میو ہسپتال کے نیورالوجی ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے ایک لیٹر میں کہا گیا کہ ڈاکٹروں کی کرونا وارڈ میں ڈیوٹی سے 5 ڈاکٹروں میں کرونا کی تشخیص ہوئی جبکہ ایک ڈاکٹر کی والدہ کی کرونا سے موت ہو چکی ہے۔لیٹر میں کہا گیا کہ ڈاکٹر کرونا وارڈ میں ڈیوٹی کریں گے لیکن کرونا سے بچاؤ کے لئے حفاظتی اقدامات کئے جائیں، ڈاکٹروں سے زیادہ ڈیوٹیز لینے پر بھی اعتراض کیا گیا ہے۔

ڈرمٹالوجی ڈیپارٹمنٹ میو ہسپتال کی جانب سے جاری لیٹر میں کہا گیا ہے کہ ہمارے ڈیپارٹمنٹ کے ڈاکٹر کی ایکسپو قرنطینہ سنٹر میں کرونا کے مریضوں پر ڈیوٹی لگا دی گئی لیکن انہیں کرونا سے بچاؤ اور مریضوں کی دیکھ بھال کے حوالہ سے کسی قسم کی کوئی ٹریننگ نہیں دی گئی۔ جس سے ڈاکٹروں کی زندگی کو خطرے میں ڈال دیا گیا ہے ۔جس پرڈاکٹر کرونا مریضوں کا بغیر ٹریننگ کے علاج نہیں کر سکتے ہیں۔

نیورالوجی ڈیپارٹمنٹ کے چیئرمین نے چیف ایگزیکٹو میو ہسپتال کو لکھے گئے خط میں کہا کہ ڈاکٹروں کی زندگیاں خطرے میں ہیں، بغیر ٹریننگ کے ڈاکٹرز کو کرونا وارڈ میں تعینات کرنا انکی جانوں سے کھیلنے کے مترادف ہے۔ اگر ڈاکٹر انکار کر رہے ہیں تو میں کیسے انہیں کہوں جب 5 ڈاکٹر کرونا کا شکار ہو چکے ہیں.

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -کورونا وائرس -