36سالہ رقاصہ نے ڈانس چھوڑ کر ایسا پیشہ اختیار کرلیا کہ ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگی، ہرکوئی حیران

36سالہ رقاصہ نے ڈانس چھوڑ کر ایسا پیشہ اختیار کرلیا کہ ماہانہ لاکھوں روپے ...
36سالہ رقاصہ نے ڈانس چھوڑ کر ایسا پیشہ اختیار کرلیا کہ ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگی، ہرکوئی حیران

  

میڈرڈ(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا میں ہزار طرح کے پیشے ہیں مگرسپین میں ایک خاتون نے کچھ ایسا پیشہ اختیار کر کھا ہے اور اس سے لاکھوں روپے ماہانہ کما رہی ہے کہ سن کر حیرت گم ہو جائے۔ دی مرر کے مطابق اس 36سالہ خاتون کا نام ییلا وونک ہے جو انٹرنیٹ پراپنی فحش تصاویر اور اپنے استعمال شدہ انڈرویئر اورجرابیں وغیرہ فروخت کرتی ہے۔ دی ہیگ کی رہائشی اس خاتون نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ اس کام سے ماہانہ 75ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 1کروڑ 54لاکھ روپے)تک کمالیتی ہے۔

ییلا وونک کاکہنا تھا کہ ”اس پیشے کی طرف آنے سے قبل میں پیشہ ور رقاصہ تھی اور کلبوں میں ڈانس کرتی تھی۔ پھر میں نے ڈانسنگ چھوڑ کر اس کام کی طرف آنے کا فیصلہ کرلیا۔ اب مجھے واشنگ مشین کی بھی ضرورت نہیں پڑتی، کیونکہ لوگ میرے استعمال شدہ انڈرویئر، جرابیں، کپڑے اور بدبودار جوتے وغیرہ سب کچھ خریدلیتے ہیں۔ میں اس پیشے سے ڈانسنگ کی نسبت کئی گنا زیادہ کما رہی ہوں اور اب میں اپنا گھر بھی خریدنے جا رہی ہوں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -