صوبہ سندھ کے بجٹ کے خدوخال سامنے آگئے

صوبہ سندھ کے بجٹ کے خدوخال سامنے آگئے
صوبہ سندھ کے بجٹ کے خدوخال سامنے آگئے

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )صوبہ سندھ کے مالی  سال 22-2021 کے بجٹ کی تفصیلات سامنے آگئیں ہیں۔

جیو نیوز کے مطابق سندھ کے بجٹ کا مجموعی حجم 14 کھرب سے زائد ہوگا، نئے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا جائے گا۔ بجٹ میں پولیس اور امن و امان کی صورتحال بہتر بنانے کے لیے 105 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔صحت کے شعبے کے لیے اضافے کے ساتھ 172 ارب روپے رکھنے کی تجویز میں بجٹ کا حصہ ہے۔سکول ایجوکیشن کے لیے 215 ارب روپے مختص کرنے کا کہا گیا ہے۔ محکمہ تعلیم کا نصف سے زائد بجٹ غیر ترقیاتی اخراجات کے لیے مختص ہوگا۔ محکمہ بلدیات کے لئے 119 اعشاریہ 75 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔محکمہ آب پاشی سندھ کا مجموعی بجٹ 53 ارب روپے، ٹرانسپورٹ کے لیے 14 ارب، کالج ایجوکیشن کے لیے 25 ارب روپے رکھے جانے کی تجویز سامنے آئی ہے۔

سندھ اسمبلی میں بجٹ اجلاس کل (منگل کو)  سہ پہر 3 بجے طلب کیا گیا ہے۔

مزید :

قومی -