’ہم ہاتھ باندھے بیٹھے نہیں رہیں گے‘نیٹو کے بیان پر چین بھی میدان میں آگیا ،دبنگ بیان دے دیا

’ہم ہاتھ باندھے بیٹھے نہیں رہیں گے‘نیٹو کے بیان پر چین بھی میدان میں آگیا ...
’ہم ہاتھ باندھے بیٹھے نہیں رہیں گے‘نیٹو کے بیان پر چین بھی میدان میں آگیا ،دبنگ بیان دے دیا

  

برسلز(محمد عاطف حسین )چینی سفارتی مشن برائے یورپی یونین نے ایک بیان میں نیٹو پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ چین کی پرامن ترقی پر بہتان لگا رہے ہیں اور زور دیا کہ چین اپنی دفاعی پالیسی پر عمل پیرا رہے گا جو کہ دفاعی مقاصد کے لیے ہے۔چین کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ چین کسی کے لیے چیلنج نہیں پیش کرے گا لیکن اگر کوئی چیلنج ہمارے قریب آیا تو ہم ہاتھ باندھ کر بیٹھے بھی نہیں رہیں گے۔

اس سے قبل برسلز میں ہونے والے نیٹو سربراہی اجلاس کے اختتام پر جاری ہونے والے بیان کہا گیا تھا کہ چین کے مقاصد، خواہشات اور ان کا جارحانہ رویہ قوانین پر مبنی بین الاقوامی نظام کے لیے اور اس اتحاد کی سیکیورٹی کے حوالے سے ایک چیلنج ہے،ہم چین کی جانب سے ڈس انفارمیشن کے استعمال اور غیر شفافیت کے حوالے سے خدشات رکھتے ہیں۔نیٹو کی جانب سے چین کے بارے میں پیغام ایسے وقت میں آیا ہے جب گذشتہ ہفتے دنیا کی سات بڑی معاشی قوتوں کے گروپ جی سیون نے اپنے اختتامی بیان میں چین کی جانب سے مبینہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی پر تنقید کی تھی اور کووڈ 19 کے آغاز کے بارے میں شفاف تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا۔جی سیون کے الزامات کے جواب میں چین نے ان پر الزام لگایا کہ وہ ’جھوٹ، افواہیں اور بے بنیاد الزامات‘ عائد کر رہے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -