مقبوضہ کشمیر میں سچ کا ساتھ دینے پر بھارتی مصنفہ ارون دھتی رائے کیخلاف مقدمہ چلے گا

مقبوضہ کشمیر میں سچ کا ساتھ دینے پر بھارتی مصنفہ ارون دھتی رائے کیخلاف ...
 مقبوضہ کشمیر میں سچ کا ساتھ دینے پر بھارتی مصنفہ ارون دھتی رائے کیخلاف مقدمہ چلے گا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ کشمیر کو بھارت کا اٹوٹ انگ ماننے سے انکار کرنے پرعالمی شہرت یافتہ بھارتی لکھاری ارون دھتی رائے پر بھارت میں انسداد دہشتگردی قوانین کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔

14 سال پہلے ارون دھتی رائے نے 2010 میں نئی دلی میں کشمیر پر منعقدہ تقریب میں کہا تھا کہ کشمیر کبھی بھی بھارت کا اٹوٹ انگ نہیں رہا۔ بھارتی فوج نے کشمیر پر زبردستی قبضہ کیا اور کشمیر کی آزادی کی ہر ممکن کوشش ہونی چاہیے۔ مودی حکومت کے متنازعہ انسداد دہشت گردی قانون میں مشتبہ فرد کو الزامات عائد کیے بغیر 180 روز کی قید میں رکھا جاسکتا ہے۔

بکر پرائز کا اعزاز حاصل کرنے والی 62 سالہ بھارتی مصنفہ بھارت میں اقلیتوں کے خلاف امتیازی پالیسیوں، قوانین اور معاشی عدم مساوات کے خلاف مودی حکومت کی کڑی ناقد رہی ہیں۔