کاشتکاروں کو مونگ پھلی کی کاشت کے دوران کھادوں کے متناسب استعمال کی ہدایت

کاشتکاروں کو مونگ پھلی کی کاشت کے دوران کھادوں کے متناسب استعمال کی ہدایت

 فیصل آباد (بیورورپورٹ) کاشتکاروں کو مونگ پھلی کی کاشت کے دوران نائٹروجن ، فاسفورس ، پوٹاشیم ،جپسم اور دیگر کھادوں کے متناسب استعمال کی ہدایت کی گئی ہے اور کہاگیاہے کہ وسط اپریل تک مونگ پھلی کی کاشت مکمل کرلینی چاہیے کیونکہ مونگ پھلی کے بیج کو اگاؤ کیلئے 25 ڈگری سینٹی گریڈ سے زیادہ درجہ حرارت درکار ہوتاہے۔ ماہرین زراعت نے کہاکہ مونگ پھلی ایک پھلیدار فصل ہونے کی بدولت اپنی ضرورت کی 80فیصد نائٹروجن فضاء سے حاصل کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے تاہم ابتدائی نشوونما کیلئے کاشت کے وقت 20کلوگرام نائٹروجن ، 80کلوگرام فاسفورس اور 20کلوگرام پوٹاشیم فی ایکڑ ڈالی جائے توشاندار پیداوار حاصل ہو سکتی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ جب فصل پھول نکال رہی ہو تو اس وقت اسے 200 سے 500کلو گرام فی ایکڑ جپسم ڈالنا بھی ضروری ہے ۔ انہوں نے کہاکہ مونگ پھلی کی کاشت ہمیشہ بذریعہ پور یا سنگل رو کاٹن ڈرل کرنی چاہیے اور بیج کی گہرائی بھی 5 سے 7سینٹی میٹر ، قطاروں کا درمیانی فاصلہ 45سینٹی میٹر اور پودے سے پودے کا فاصلہ 10 سے15 سینٹی میٹر رکھناچاہیے۔ انہوں نے کہاکہ مونگ پھلی کو کسی بھی صورت بذریعہ چھٹا کاشت نہیں کرناچاہیے۔

مزید : کامرس