ملکی برآمدات میں مستقل کمی کے رجحا ن پر شد ید تشو یش ہے‘ صدر ایف پی سی سی آئی

ملکی برآمدات میں مستقل کمی کے رجحا ن پر شد ید تشو یش ہے‘ صدر ایف پی سی سی آئی

 کراچی ( اکنامک رپورٹر)فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹر ی کے صدر میاں محمد ادریس نے ملکی بر�آمدات میں مستقل کمی کے رجحا ن پر شد ید تشو یش کا ظہا ر کر تے ہو ئے کہا کہ یہ کا روباری اداروں کی ناکا می کی وجہ سے نہیں بلکہ انتظا می اقدا مات کی ناکامی اور ملکی معیشت کی نمو کی را ہ میں بیو رو کر ٹیک رکا وٹو ں کی وجہ سے ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹیکسٹا ئل سیکٹر جو کہ پچھلے چند سالوں سے گھمبیر مسائل کا شکا ر ہے۔ جسکے نتیجہ میں ٹیکسٹا ئل سیکٹر کی ایکسپورٹ میں کمی رہی با وجو د یہ کہ پاکستان کو یو رپی یو نین کی جانب سے جی ایس پی پلس کا در جہ ملا ہو ا ہے ۔ میاں محمد ادریس نے مز ید کہا کہ بز نس کمیونٹی جا ہتی ہے کہ پاکستان کی ایکسپورٹ 1ارب ڈالر سالا نہ تک بڑھے ۔لیکن ایکسپورٹر ز کے لمبے عر صے سے پھنسے ہو ئے ری فنڈز ،پا ور اور گیس کی کمی یا عدم دستیا بی جیسے مسائل حل نہ کیئے گئے تو ملکی ایکسپورٹ میں اضا فہ ممکن نہیں ہو گا ۔ انہوں نے مز ید کہا کہ FBRمیں پھنسے ہو ئے ری فنڈ کی وجہ سے ملکی معیشت کاا یکسپورٹ اور ینٹڈ سیکٹر عمومی اور ٹیکسٹائل سیکٹر خصو صی طو ر پر سخت مشکلات کا شکا ر ہے جنکی وجہ سے وہ مالیا تی وسائل کی کمی کا شکا ر ہیں اور نتیجتاً اور مجبو ر ہو تے ہیں کہ وہ زیا دہ شر ح سود پر ور کنگ کیپٹل حا صل کر یں جو کہ بالآخر عالمی منڈ ی میں ان کی مسابقت اور مقر ر ہ وقت پر ایکسپورٹ آرڈرز کی ڈیلیوری کو بھی متا ثر کر تی ہے ۔ میاں محمد ادریس نے کہا کہ غیر ملکی کر نسی کے مقابلے میں ملکی کر نسی کی قدر میں اضا فہ کی اس صورت حال میں عالمی منڈ ی میں پاکستا نی ایکسپورٹر ز کو مستحکم اور قا بل مسابقت بنا نے کے لیے حکو مت مزید اقدا ما ت کر ے ۔ انہوں نے کہا کہ اس با ت پر زور دیا کہ اگر FBRایکسپورٹر ز کے ری فنڈ کی ادائیگیا ں جلد کر دے تو ہما ری انڈ سٹر ی کے بیشتر مالی مسائل بھی حل ہو جا ئینگے اور وہ عالمی منڈ ی میں قابل مسابقت بھی رہے گا ۔

مزید : کامرس