اقتصادی رابطہ کمیٹی نے’’ تا پی‘‘ گیس منصوبہ منظور کر لیا

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے’’ تا پی‘‘ گیس منصوبہ منظور کر لیا

 اسلام آباد(اے این این)کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے’’ تاپی‘‘ گیس منصوبے کی بھی منظوری دے دی ، منصوبہ ترکمانستان سے براستہ افغانستان پاکستان تک مکمل کیا جائے گا جبکہ گیس پائپ لائن بھارت تک جائے گی،منصوبے کے مطابق گیس کا 75فیصد حصہ سوئی نادرن اور25 فیصد حصہ سوئی سدرن گیس کمپنی کو دیا جائے گا ۔ کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس گزشتہ روز وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں کھاد کے کارخانوں کو سوئی نادرن گیس کمپنی کے نیٹ ورک کے ذریعے ایل این جی کی سپلائی کی منظوری دی گئی، قطر سے درآمد کی جانے والی ایل این جی کی قیمتوں کے تعین کا طریقہ کار وزارت پٹرولیم ، پانی و بجلی ، صنعت و پیداوار اور ایف بی آر مل کر طے کریں گے،اجلاس میں اٹک سیمنٹ پاکستان لمیٹڈ کو عراق میں سیمنٹ کارخانہ لگانے کی اجازت دے دی گئی، سیمنٹ فیکٹری میں پچاس فیصد مزدور پاکستانی ہوں گے جبکہ قومی خزانے کو 24 ملین ڈالر کی آمدن ہو گی،اقتصادی رابطہ کمیٹی نے دسمبر سے مارچ تک رکی ہوئی پاکستان پرنٹنگ کارپوریشن کے ملازمین کوتنخواہوں کیلئے آٹھ کروڑ چالیس لاکھ روپے جاری کرنے کی بھی منظوری دی ۔اجلاس میں وزارت پٹرولیم کی سمری پر ، کمیٹی نے وزارت دفاعی پیداوار کی سمری میں واہ براس ملز کی طرف سے قرضے کی ادائیگی کی مدت میں توسیع کردی۔

مزید : صفحہ اول