مانگا منڈی ،شوہر کے اغوا کا ڈرامہ رچانے والی خود قاتل نکلی ،ملزمہ گرفتار

مانگا منڈی ،شوہر کے اغوا کا ڈرامہ رچانے والی خود قاتل نکلی ،ملزمہ گرفتار

مانگا منڈی (نمائندہ خصوصی) شوہرکے اغوا کا ڈرامہ رچا نے والی عورت اپنے خاوند کی قاتل نکلی، قتل کی وجہ نامناسب تعلقات تھے ۔تفصیلات کے مطابق تھانہ مانگا منڈی کی نواحی بستی چراغ ٹاؤن سے 3روز قبل نامعلوم افراد 36سالہ شوکت علی کو اغوا کر کے لے گئے۔ شوکت علی کے کزن محمد سرور کے بیان پر تھانہ مانگا منڈی نے اغوا کا مقدمہ درج کرلیا مگر تیسرے روز نہر کے کنارے خاں بشیر احمد باغ سے اسکی لاش مل گئی، نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے اسے بے دری سے قتل کر دیاتھا۔ پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کروانے کیلئے جناح ہسپتال لاہور کے مردہ خانہ میں جمع کروا دیا مگر چوتھے روز نیا انکشاف ہوا کہ کہ شوکت علی کواس کی بیوی شمیم بی بی نے اپنے ساتھیوں سے قتل کروایا ہے۔ محلہ داروں سے معلوم ہوا کہ شوکت علی بہت شریف اور نیک انسان اور سپریم کورٹ میں ملازمت کرتا تھا۔ یہ بھی معلوم ہوا کہ اس کی بیوی شمیم بی بی ا کے پنے ماموں کے بیٹے ساتھ تعلقات تھے، قتل کرنے میں شمیم بی بی کے ماموں کے بیٹے اور دو ساتھیوں کا ہاتھ بھی معلوم ہوا ہے۔ تھانہ مانگا منڈی کے تفتیشی افسر رانا محمد افضل نے شمیم بی بی کو گرفتار کرکے مقامی صحافیوں سے چھپا کر رکھا ہے اس سے ملنے بھی نہیں دیا گیا نہ کوئی بیان لینے دیا بلکہ نمائندہ روز نامہ’’ پاکستان ‘‘کو ٹیلی فون پر کہا کہ یہ خبر ابھی شائع نہ کریں پہلے مجھے انویسٹی گیشن مکمل کر لینے دیں ۔یہ بھی معلو م ہوا ہے تفتیشی افسر قتل کرنے والوں کی سائیڈلے رہا ہے اس لیے خبر شائع کروانے سے منع کر رہا ہے ۔محلے داروں کے مطابق پولیس نے شوکت علی کی بیوی شمیم بی بی اور اس کے کزن محمد اقبال،محمد سلیم کو گرفتار کرکے کسی خفیہ ٹارچر سیل میں چھپا رکھا ہے۔ انویسٹی گیشن انچارج خالد محمود ورک سے رابطہ کیا تو انہوں نے سخت الفاظ میں اخبار نویسوں کو خبر شائع کرنے سے منع کیااورکہاکہ تفتیش کے بعد خبر شائع کرنے کی اجازت دیں گے۔

مزید : علاقائی