فورٹ عباس میں 90 سالہ شخص کو زندہ جلادیا گیا

فورٹ عباس میں 90 سالہ شخص کو زندہ جلادیا گیا
فورٹ عباس میں 90 سالہ شخص کو زندہ جلادیا گیا

  

فورٹ عباس (ویب ڈیسک) قتل کے رنجش پر 90 سالہ بوڑھے کو آگ لگا کر زندہ جلادیا گیا، تین ماہ قبل بوڑھے بشیر احمد کے بیٹے محمد رضوان نے شاہد جاوید کو قتل کردیا تھا۔ مقامی اخبار نئی بات کے مطابق فورٹ عباس کے نواحی گاﺅں میں عبدالرزاق نے کہا کہ میری بیٹی نازیہ پروین کی شادی بوڑھے بشیر احمد کے بیٹے محمد رضوان سے ہوئی ہے، میرے داماد محمد رضوان نے اپنے گھر میں شاہد جاوید کو قتل کردیا تھا، اس طرح محمد رضوان مقدمہ قتل میں چالان عدالت ہوچکا ہے۔ میری بیٹی نازیہ پروین میرے پاس رہتی ہے اور قتل ہونے والا بشیر احمد اپنے گھر میں اکیلا رہتا تھا، بشیر احمد کے جسم کی دائیں سائیڈ فالج کی وجہ سے کمزور تھی۔ شاہد جاوید کے رشتہ داروں غلام باری وغیرہ کو شاہد جاوید کے قتل کا رنج تھا، گزشتہ رات آٹھ بجے بشیر احمد اپنی بہو کے گھر سے کھانا کھا کر واپس آیا اور کمرے میں لیٹ گیا، جب گواہان بشیر احمد کے گھر پہنچے چارپائی کو آگ لگی ہوئی تھی اور بشیر احمد کا جسم مکمل طور پر جھلس چکا تھا، پولیس نے پوسٹ مارٹم کے بعد مقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید : جرم و انصاف