برآمدی شعبہ میں بجلی ریلیف کا فیصلہ لائق تحسین ہے:رشید بٹ

  برآمدی شعبہ میں بجلی ریلیف کا فیصلہ لائق تحسین ہے:رشید بٹ

  



اسلام آباد(آن لائن) اسلام آباد چیمبر کے سابق صدر شاہد رشید بٹ نے کہا ہے کہ برآمدی شعبہ کے لئے بجلی کے خصوصی ریلیف پیکج کا فیصلہ لائق تحسین ہے جس سے برآمدات، ریونیو اور روزگار بڑھے گا۔ اس فیصلے سے بجلی کی قیمت میں حالیہ ہوشرباء اضافہ سے پریشان برامدی شعبہ نے سکھ کا سانس لیا ہے تاہم یہ ریلیف امسال جون تک ہے۔ ساڑھے تین ماہ تک برامدی شعبہ کی کاروباری لاگت میں کمی آئے گی اور پاکستانی مصنوعات بین الاقوامی منڈی میں مسابقت کے قابل ہو جائیں گی مگر حکومت کو چائیے کہ اگلے سال کے لئے بھی اسی ٹیرف کو لاگو رکھنے کا اعلان کرے تاکہ نجی شعبہ مزید سرمایہ کاری کرنے کی پوزیشن میں آ جائے تاکہ عالمی منڈی میں پیدا ہونے والا خلا پر کیا جا سکے۔ہفتہ کے روز جاری ایک بیان میں شاہد رشید بٹ نے برامدی شعبہ میں جدید ترین ساز و سامان کے استعمال سے بین القوامی منڈی میں پاکستان کا حصہ بڑھایا جا سکتا ہے۔حکومت خام کپاس اور دھاگے کے بجائے تیار ملبوسات کی برامد کی حوصلہ افزائی کرے جس میں سرمایہ کاری کم اور روزگار ومنافع زیادہ ہے۔ایک پڑوسی ملک سالانہ تقریباً نو ارب ڈالر کی کپاس اور دھاگہ چین برامد کرتا ہے جس سے چین لباس تیار کر کے ساٹھ ارب ڈالر میں فروخت کردیتا ہے۔پاکستان بھی جن ممالک کو خام مال برامد کرتا رہا ہے وہ بھی اسے پراسس کر کے آٹھ سے دس گنا قیمت میں فروخت کرتے رہے ہیں۔انھوں نے کہا کہ پاکستان میں ٹیکسٹائل پالیسی کو بہتر بنانے اور ایسے میگا ٹیکسٹائل پارک بنانے کی ضرورت ہے جہاں دھاگہ وکپڑا بنانے، کپڑا رنگنے اور ملبوسات تیار کرنے کی فیکٹریاں ایک دوسرے کے قریب واقع ہوں تاکہ لیبر کی دستیابی، ٹرانسپورٹیشن، ٹیکس اور انفراسٹرکچر سمیت متعدد معاملات میں سہولت اخراجات کم اور پیداوار بڑھائی جا سکے جس سے پاکستان کو ٹیکسٹائل سپر پاور بنانے میں مدد ملے گی۔

مزید : کامرس