تمام سیاسی جماعتیں جنوبی پنجاب صوبہ بل کی حمایت کریں، سمیع الحسن گیلانی

تمام سیاسی جماعتیں جنوبی پنجاب صوبہ بل کی حمایت کریں، سمیع الحسن گیلانی

  



اوچ شریف(سٹی رپورٹر،نامہ نگار) پارلیمنٹ میں جنوبی پنجاب صوبہ کی قرارداد پیش کرنے والے اوچ شریف سے رکن قومی اسمبلی مخدوم سید سمیع الحسن گیلانی نے اپنی رہائش گاہ پر نیوز کانفرنس کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بہاول پور میں (بقیہ نمبر9صفحہ12پر)

سیکرٹیریٹ کے قیام کا اعلان کرکے وزیر اعظم عمران نے جنوبی پنجاب صوبہ کی بنیاد رکھ دی، بہاول پور سمیت جنوبی پنجاب کی 70 سالہ محرومیوں کا ازالہ نئے صوبہ کے قیام سے ہی ممکن ہے، تمام جماعتوں کو جنوبی پنجاب صوبہ بل کی حمایت کرنی چاہئیے، وزیر اعظم سے ملاقات کے دوران جنوبی پنجاب صوبہ کے صدر مقام بہاول پور کی مخالفت کرنے کی مجھ سے منسوب کی گئی خبریں من گھڑت اور پروپیگنڈا ہے، بہاول پور میرا اپنا گھر ہے کوئی اپنے گھر کی بھلا کیسے مخالفت کرسکتا ہے، صوبہ جنوبی پنجاب کی قرارداد میں نے پارلیمنٹ میں پیش کی جو مخالفین سے برداشت نہیں ہورہی اور بے بنیاد خبریں پھیلا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ اس وقت سب سے اہم مسئلہ جنوبی پنجاب صوبہ کا قیام ہے، وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت جنوبی پنجاب صوبہ کے حوالہ سے ہونے والے اجلاس میں اراکین اسمبلی نے اپنی اپنی رائے پیش کی، کچھ اراکین نے ملتان اور کچھ نے بہاول پور کو صوبائی دارالحکومت بنانے کی تجویز دی، میں نے اس بات پر زور دیا کہ جنوبی پنجاب صوبہ کا قیام جلد سے جلد عمل میں لایا جائے، باقی تمام معاملات بھی مشاورت سے حل ہو جائیں گے، صوبہ جنوبی پنجاب کا بل اسمبلی سے پاس ہونے کے بعد صدر مقام بھی فائنل ہوجائے گا، ان شاء اللہ مجھ سمیت بہاول پور کے تمام پارلیمنٹیرینز کی متفقہ کوششوں سے صدر مقام بہاول پور بنوائیں گے، اس وقت سب سے اہم بات جنوبی پنجاب صوبہ کا قیام ہے جنوبی پنجاب صوبہ بل کی حمایت سب جماعتوں کو کرنی چاہئیے نا کہ پوائنٹ سکورنگ کرنی چاہئیے، یہ وقت پوائنٹ سکورنگ کا نہیں، کیونکہ یہ جنوبی پنجاب کے عوام کے محرومیوں کے ازالہ کے لئے بہت ضروری ہے، جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام سے این ایف سی ایوارڈ، پبلک سروس کمیشن، گورنر ہاؤس، سیکرٹریٹ، تعلیم یافتہ بچوں کو کٹیر تعداد میں ملازمتوں سمیت جنوبی پنجاب کا بجٹ جنوبی پنجاب پر ہی خرچ ہوگا، صوبہ کے قیام سے نئے اضلاع اور تحصیلیں بنیں گی، احمد پور شرقیہ ضلع اور اوچ شریف تحصیل بنے گی، ان کے خاندان کے افراد نے اپنی کروڑوں مالیتی جائیدادوں کو وقف کیا ہے اور اوچ شریف میں تمام سرکاری عمارتیں ان کی اور ان کے آباؤ اجداد کی وقف کردہ ہیں، اوچ شریف تحصیل بنتے ہی وہ 100 کنال اراضی سرکاری عمارتوں کے لئے مفت وقف کریں گے تاکہ تمام دفاتر اس اراضی پر بنائے جا سکیں، انہوں نے کہا کہ ان شاء اللہ جنوبی پنجاب بل اسمبلی سے پاس کرالیں گے اور اس بل کی جس نے بھی مخالفت کی آئندہ انتخابات میں عوام ضمانت ضبط کرادیں گے۔

سمیع الحسن گیلانی

مزید : ملتان صفحہ آخر