جنگ جیو کے مالک میر شکیل الرحمان کی گرفتاری کیخلاف مظاہرے

جنگ جیو کے مالک میر شکیل الرحمان کی گرفتاری کیخلاف مظاہرے

  



پشاور،اضلاع (سٹی رپورٹر،نمائندگان پاکستان)پشاور پریس کلب اور خیبر یونین آف جرنلسٹ پشاور کے زیر اہتمام نیب کی جانب سے میر شکیل الرحمن کے گرفتاری کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جسمیں پشاور کے صحافیوں سمیت مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماوں نے شرکت کی۔مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بیرنز اتھا رکھے تھے جس پر میر شکیل الرحمن کے حق میں نعرے درج تھے مظاہرے کی قیادت پشاور پریس کلب کے صدر سید بخارشاہ،فنانس سیکرٹری عزیزر بنیری،امجد عزیز ملک،عرفان موسی زئی،ارشاد میدانی،عمران یوسفزئی اوردیگر صحافیوں نے کی۔اس موقع پر شرکاء کا کہنا تھا کہ میر شکیل الرحمن کی گرفتاری آزادی صحافت پر حملہ ہے جسکی جتنی بھی مذت کی جائے کم ے۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے پہلے اشتہارات بند کر کے صھافیوں کا معاشی قتل عام کیا اب نیب کیساتھ گٹھ جوڑ کر کے صحافت پر حملہ اور ہو رہی ہیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ جیو جنگ گروپ کے سربراہ میر شکیل الرحمن کو رہا کیا جائے اور سپریم کورٹ حکومت اور نیب کے گٹھ جوڑ کا نوٹس لے ٭ نوشہرہ پریس کلب کا جنگ، جیو اور دی نیوز کے ایڈیٹر انچیف میر شکیل الرحمان کی گرفتاری کے خلاف زبر دست احتجاجی مظاہرہ مظاہرین کی قیادت نوشہرہ کے سینئر صحافی مشتاق احمد پراچہ، پریس کلب کے جنرل سیکرٹری حاجی ظہور احمد، شہنشاہ متحدہ لیبر فیڈریشن کے صوبائی صدر محمد اقبال، جمعیت علما ء اسلام کے مفتی حاکم علی حقانی، جماعت اسلامی نوشہرہ کینٹ سرکل کے امیر افتخار احمد خان کر رہے تھے مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جس پرنیب عمران گٹھ جوڑ اور میر شکیل الرحمان کی گرفتاری کے مذمتی نعرے درج تھے مظاہرین نوشہرہ پریس کلب سے شوبرا چوک تک جلوس کی شکل آئے جہاں پر جلوس نے جلسے کی شکل اختیار کی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے نوشہرہ کے سینئر صحاٖفی مشتاق احمد پراچہ، متحدہ لیبر فیڈریشن کے صوبائی صدر محمد اقبال، جمعیت علما اسلام کے ضلعی جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی، افتخار احمد خان نے کہا کہ عمران خان ملک میں نیب کو انتقام کیلئے استعمال کر رہے ہیں اور اسی عمران نیب گٹھ جوڑ پورے ملک کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اور اب انہوں نے میر شکیل الرحمان کو گرفتار کر کے ملک میں آزادی صحافت پر وار کر دیا انہوں نے مزید کہا کہ ہم نیب کو آگاہ کرنا چاہتے ہیں کہ وہ عمران کی ایما پر عزت دار شہریوں کی پھگڑیا ں اچھلنا بند کر دے ایسا نہ ہو کہ نیب کو بھی لینے کو دینے پڑ جائے مقررین نے مزید کہا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ جنگ میڈیا گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان کو رہا کیا جائے بصورت دیگر راستاقدام پر مجبور ہو جائیں گے ٭باجوڑ پریس کلب، ٹی یوجے اور باجوڑ یوتھ جرگہ کا جیو اینڈ جنگ گروپ کے سی ای او میر شکیل الرحمن کے گرفتاری کیخلاف مشترکہ احتجاجی مظاہرہ۔ مظاہرین کا میر شکیل الرحمن کے گرفتاری کیخلاف نعرے بازی، فوری رہا کیاجائے۔مظاہرین کا مطالبہ۔ ہفتہ کے دن باجوڑ پریس کلب کے سامنے باجوڑ پریس کلب، ٹرائبل یونین آف جرنلسٹس اور باجوڑ یوتھ جرگہ کے زیر اہتمام مشترکہ احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈ اُٹھارکھے تھے جس پرمیر شکیل الرحمن کے گرفتاری کیخلاف اور صحافت پر پابندی نامنظور کے نعرے درج تھے۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے باجوڑ پریس کلب کے صدر حسبان اللہ، سینئر صحافیوں صاحبزادہ بہاوالدین جان، حاجی نعیم اللہ، انورذادہ گلیار، طاہر خان درانی، باجوڑ یوتھ جرگہ کے چیئرمین فرمان اللہ، جاوید تندر، صدیق اکبر، مولانا ثناء اللہ،شوکت اللہ، واجد علی، خائستہ رحمن اتش، نجیب اللہ، عبید خان اور دیگر مقررین نے کہا کہ میر شکیل الرحمن کو فوری طورپر رہا کیاجائے۔ اور نیب صحافیوں کیخلاف انتقامی کاروائیاں بند کریں اور جیو نیوز کو پرانے نمبروں پر بحال کیاجائے۔ انہوں نے کہا کہ اظہار رائے پر پابندی کیلئے نیب کی غنڈہ گردی قابل مذمت ہے۔ حکومت نے اظہار رائے پر پابندی کی بدترین مثال قائم کردی۔ 

مقررین نے کہا کہ ضلع بھرکے صحافی میر شکیل الرحمن کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور میر شکیل الرحمن کو فوری طورپر رہاکیاجائے٭جنگ جیو کے ایڈیٹر انچیف میر شکیل الرحمن کی گرفتاری کے خلاف شیرگڑھ پریس کلب کے صحافیوں نے پریس کلب کے سامنے مظاہرہ کیامظاہرین نے ہاتھوں میں کتبے اٹھا رکھے تھے جس پر میر شکیل الرحمن کو رہا کرو،میر شکیل الرحمن کی گرفتاری ازادی صحافت پر حملہ ہے،صحافت پر قد غن نا منظور نامنظور اور صحافیوں کو تحفظ دو کے نعرے درج تھے اس موقع پر صحافیوں نے زبردست نعرہ بازی کی مظاہرین سے اپنے خطاب میں شیرگڑھ پریس کلب کے صدر بخت اللہ جان حسرت نے کہا کہ میر شکیل الرحمن کی گرفتاری ازادی صحافت پر حملہ اور قد غن ہے جس کی ہم پر زور مذمت کرتے ہے حکو مت میر شکیل الرحمن کو فوری رہا کرکے ان کے خلاف بے بنیاد اور جھوٹے مقد مات واپس لیں بد قسمتی سے پاکستان کے ہر حکمران نے اقتدار سنبھالتے ہی پہلا وار صحافیوں پر کیا اور ہر آمر نے میڈیا کا گلا دبانے کی کوشش کی مگر ناکام رہے اور جیت ہمیشہ حق اور سچ کی ہوئی مظاہرے سے تخت بھائی کے سینئر صحافی مسلم خان صابر،افسر علی خان لوند خوڑ اور جمیل الرحمن نے بھی خطاب کیا٭ جنگ،جیو کے ایڈیٹر انچیف میر شکیل الرحمان کی گرفتاری کے خلاف ہنگو پریس کلب اور اورکزئی پریس کلب کے زیر اہتمام ایک احتجاجی ریلی مین چوک پر منعقد ہوئی جس میں اورکزئی اورہنگو کے جملہ صحافیوں نے بھر پور شرکت کی۔ریلی کی شرکاء نے مختلف بینرزاُٹھار کھے تھے جس پر میر شکیل کی گرفتاری آزادی صحافت پر حملہ ہے،میر شکیل کو رہا کرو،نیب انتقامی کاروائیاں بند کردیں،اور صحافت آزاد کرو کے نعرے درج تھے۔ شرکاء نے مختلف نعرے لگاتے ہوئے مین چوک ٹریفک کیلئے بند کردیا گیا۔ ریلی سے ہنگو کے سنیئر صحافیوں اسراراحمد اورکزئی صالح دین اورکزئی طارق محمود مغل و دیگر نے خطاب کیا اور میر شکیل الرحمان کی گرفتاری کو آزادی صحافت پر حملہ قرار دیا اور کہا کہ نیب صحافیوں کے خلاف انتقامی کاروائیوں پر اُتر آیا ہے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ میر شکیل الرحمان کو فوری طور پر رہا کیا جائے بصورت دیگر ہماری احتجاج کا دائر ہ وسیع کرنے پر مجبور ہوجائینگے٭نیب کی جانب سے جنگ گروپ کے ایڈیٹرانچیف میرشکیل الرحمان کوگرفتارکرنے پرمالاکنڈکے صحافی برادری اورسیاسی جماعتوں کے قائدین سراپااحتجاج بن گئے حکومت سے مطالبہ کیاہے وہ فوری طورپرمیرشکیل الرحمان کورہاکیاجائے ورنہ پورے ملک کے عوام اورصحافی برادری احتجاج کرنے پرمجبورہوجائیگی۔تفصیلات کے مطابق موجودہ حکومت نے اپنے کرپشن اورکرتوتوں کوچھپانے کیلئے ملک کے سب سے بڑے صحافی ادارے (جنگ) گروپ کے ایڈیٹرانچیف میرشکیل الرحمان کونیب کے ہاتھوں بلاجوازگرفتارکرنے پرڈسٹرکٹ پریس کلب مالاکنڈکے صدرظاہرشاہ نائب صدرمحمدعثمان یوسفزئی جنرل سیکرٹری ولایت خان باچاجماعت اسلامی کے مرکزی جائنٹ سیکرٹری سابق ایم این اے سیدبختیارمعانی مسلم لیگ کے ضلعی صدرسجادخان انجمن تاجران بازاربٹ خیلہ کے صدر حاجی شاکراللہ خان جمعیت علماء اسلام کے ضلعی صدرمفتی کفایت اللہ عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی صدراعجازخان پختونخواملی عوامی پارٹی کے صوبائی راہنماحکیم شاہ پیپلزپارٹی کے صوبائی صدرمحمدہمایوں خان پیپلزپارٹی شہیدبھٹورروپ کے ضلعی صدرمحمدزادہ بھٹونے میرشکیل الرحمان کوگرفتارکرنے کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیاہے کہ حکومت عوام کے مسائل کوحل کرنے بری طرح ناکام ہوچکاہے اب اپنے کرپشن چھپانے کیلئے (جنگ)گروپ کے ایڈیٹرانچیف میرشکیل الرحمان کوگرفتارکرکے ظلم کی انتہاکردی جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے انہوں نے کہاکہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ نیب بڑے بڑے مگرمچھوں کو گرفتارکرکے بے گناہ میرشکیل الرحمان کوباعزت رہاکیاجائے اورعوام کومزیداحتجاج کرنے پرمجبورنہ کیاجائے٭روزنامہ جنگ، دی نیوز کے مالک و ایڈیٹر انچیف میر شکیل الرحمن کی گرفتاری کے خلاف صوابی الیکٹرانک میڈیا ایسو سی ایشن کے زیر اہتمام صحافیوں نے امن چوک صوابی میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے مختلف پلے کارڈ اُٹھا رکھے تھے جس پر'' ہم نہیں مانتے ظلم کے ضابطے'' میر شکیل الرحمن کی گرفتاری بہانہ، آزادی صحافت نشانہ، جیو کو جینے دو، ہم میر شکیل الرحمن کی گرفتاری کی مذمت کر تے ہیں ان کو جلد از جلد رہا کیا جائے''اور دیگر نعرے درج تھے۔ مظاہرین سے صوابی الیکٹرانک میڈیا ایسو سی ایشن ضلع صوابی کے جنرل سیکرٹری عظمت علی، سینئر صحافی جلیل احمد خان،جے یو آئی کے ضلعی سیکرٹری اطلاعات انجینئر محمد قیصر شاہ، جماعت اسلامی کے ضلعی سیکرٹری اطلاعات عبدالسلام ایڈوکیٹ، صوابی الیکٹرانک میڈیا ایسو سی ایشن کے ضلعی صدر محمد فاروق، نائب صدر محمد عادل اور سر پرست اعلیٰ محمد شعیب اور مسلم لیگ ن ضلع صوابی کے سیکرٹری اطلاعات محمد اقبال نے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ میر شکیل الرحمن کی گرفتاری آزادی صحافت پر حملہ ہے ان کی گرفتاری نیب اور حکومت کی گٹھ جوڑ ہے ان کو جلد از جلد رہا کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ میر شکیل الرحمن کی گرفتاری میڈیا کا گلہ گھوٹنے کی کوشش ہے ان کو انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا گیا ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ پیمرا کئی مکامات پر جیو نیوز کی نشریات کو بند کرنے کا پیچھے نمبروں پر دھکیل دینے کا فیصلہ واپس لے اور ان کی نشریات کو بحال کیا جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر