ماسک اسمگلنگ،ظفرمرزا کا کردار کھل کر سامنے آگیا،کوکب اقبال

ماسک اسمگلنگ،ظفرمرزا کا کردار کھل کر سامنے آگیا،کوکب اقبال

  



کراچی(پ ر) ڈاکٹر ظفر مرزا نے 2کروڑ فیس ماسک اسمگل کرکے اپنا گھناؤنا کردار پوری قوم کے سامنے رکھ دیا۔ ڈپٹی ڈائریکٹر ڈریپ غضنفر علی اور وزیر اعظم کیمعاون خصوصی صحت کو فوری طور پر عہدے سے برطرف کیا جائے اور ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔یہ بات کنزیومر ایسوسی ایشن آف پاکستان کے چیئرمین کوکب اقبال نے کیپ کے دفتر میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے حکومتی اقدامات پر کیپ کی ہیلتھ کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت جب پورے ملک کے عوام کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے احتیاطی طور پر ماسک خریدنے پر مجبور ہیں ماسک کی دستیابی نہ صرف نایاب ہوگئی ہے بلکہ اگر کہیں اکا دکا ماسک مل رہے ہیں تو وہ عام صارفین کی قوت خرید سے باہر ہیں۔ اس وقت ملک میں فیس ماسک کی طلب میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے مگر افسوس کہ وفاقی حکومتی عہدے پر فائض مشیر صحت نے اپنی تجوریاں بھرنے کی خاطر ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان(ڈریپ) کے ڈپٹی ڈائریکٹر غضنفر علی کی ملی بھگت سے ماسک بیرون ملک بھجوانے کا ٹھیکہ پانچ کمپنیوں کو دیا۔ کوکب اقبال نے کہا کہ 2کروڑ ماسک بیرون ممالک کو بھیجنے سے ملک میں کرونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کے لیے فیس ماسک کی دستیابی ایک چیلنج کی حیثیت اختیار کر گئی ہے۔

مزید : صفحہ آخر