”مقبوضہ کشمیر سے فوری طور پر کرفیو اٹھا یا جائے کیونکہ وہاں پرکرونا کے کیسز سامنے آچکے ہیں “سارک کانفرنس میں پاکستان نے بھارت سے بڑا مطالبہ کردیا

”مقبوضہ کشمیر سے فوری طور پر کرفیو اٹھا یا جائے کیونکہ وہاں پرکرونا کے کیسز ...
”مقبوضہ کشمیر سے فوری طور پر کرفیو اٹھا یا جائے کیونکہ وہاں پرکرونا کے کیسز سامنے آچکے ہیں “سارک کانفرنس میں پاکستان نے بھارت سے بڑا مطالبہ کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان نے کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے مقبوضہ کشمیر سے فوری طور پر کرفیو اٹھانے کا مطالبہ کردیا ۔وزیر مملکت برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا ڈاکٹر ظفر مرزا نے سارک کانفرنس سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب میں کشمیریوں کے لیے آواز بلند کرتے ہوئے لاک ڈاون ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے بغیر روک ٹوک امداد کی فراہمی پر بھی زور دیا۔ان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں کرونا وائرس کے کیسز سامنے آچکے ہیں ،کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے مقبوضہ کشمیر میں اطلاعات کی ترسیل ناگزیر ہے۔ بھارت مقبوضہ جموں وکشمیر میں مواصلاتی لاک ڈاون ختم کرے اور اطلاعات کی ترسیل پر پابندیاں اٹھائے۔انہوں نے کہا کہ مقبوضہ جموں وکشمیر کے عوام کو بلا تعطل طبی سہولیات فراہم کی جائیںاور انہیں بغیر کسی رکاوٹ کے امداد فراہم کی جائے ۔ڈاکٹرظفر مرزا کاکہنا تھا کہ ہمیں کرونا سے نمٹنے کے لیے تیار رہنا ہو گا ،ڈبلیو ایچ او کی 4نکات پر مشتمل ایڈوائرس کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے بہتر ذریعہ ہے اور پاکستان اس ضمن میں اقدامات کر رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ سارک کل انسانیت کا پانچواں حصہ ہے ،سارک ممالک میں کرونا کے تصدیق شدہ کیسز موجود ہیں،سارک ممالک میں دنیا کے میگا سٹی موجود ہیں اور پاکستان کو سارک ممالک میں کرونا وائرس پھیلنے پر تشویش ہے ۔

مزید : اہم خبریں /قومی