سانحہ صفورا چورنگی اپنی نوعیت کی بدترین دہشتگردی ہے، طاہر القادری

سانحہ صفورا چورنگی اپنی نوعیت کی بدترین دہشتگردی ہے، طاہر القادری

 لاہور(نمائندہ خصوصی)پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ نااہل،کرپٹ اور بزدل سیاسی قیادت دہشتگردوں کے مکمل صفایا کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔17دسمبر 2014 کے سانحہ آرمی پبلک سکول پشاور کے بعد چاروں صوبائی دارالحکومتوں اور وفاقی دارالحکومت میں دہشت گردی کے پے در پے واقعات سے ثابت ہو گیا دہشتگرد جاگ رہے ہیں اور حکمران سو رہے ہیں۔سانحہ کراچی صفورا چورنگی اپنی نوعیت کی بدترین دہشتگردی ہے جس وقت لوگ اپنے پیاروں کی لاشیں ہسپتالوں میں پہنچارہے تھے۔گزشتہ روز مرکزی میڈیا سیل سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سانحہ آرمی پبلک سکول پشاور کے بعد قوم توقع کررہی تھی کہ اب حکمرانوں کی ساری توجہ دہشتگردی کے خاتمے کے یک نکاتی ایجنڈے پر ہو گی مگر فوج اور ذیلی اداروں کو دہشتگردی کی جنگ میں مصروف کر کے حکمرانوں نے ٹھیکہ داری شروع کر دی۔ ٹھیکے دار حکمرانوں کو عوام کے جان و مال سے کوئی غرض نہیں۔انہوں نے کہا کہ 17دسمبر کے بعد کراچی ،لاہور، اسلام آباد، پشاور، کوئٹہ ،شکاپور، چمن سمیت ہر اہم شہر میں دہشتگردوں نے 8سے زائد واقعات میں خون کی ہولی کھیلی اور باآسانی فرار ہو گئے ۔اس وقت عوام کا حکمرانوں سے اعتماد اٹھ چکا ہے اور وہ شدید اشتعال میں ہیں،بالخصوص بیرون ملک مقیم پاکستانی ، تاجر، اور مختلف شعبوں کے ماہرین ملکی حالات پر دل گرفتہ ہیں ،قدم قدم پر حکمرانوں کی نااہلی ملک اور قوم کو کامیابی کی منزل سے دور کررہی ہے اور حکمرانوں کی بے حسی کا یہ عالم ہے کہ وہ طفل تسلیوں اور زبانی جمع خرچ کے ذریعے وقت نکال رہے ہیں ۔ طاہر القادری

مزید : صفحہ آخر