انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں کے اتحاد کا اوبامہ کو خط

انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں کے اتحاد کا اوبامہ کو خط

واشنگٹن(اظہر زمان، بیورو چیف )امریکہ نے مختلف مقامات اور مواقع پر دہشتگردوں کو ڈرون حملوں کے ذریعے نشانہ بنایا ہے عام معصوم شہری بھی اس کی زد میں آئے جس کی تحقیقات ہونی چاہیے یہ مطالبہ صدر اوبامہ کے نام ایک خط میں کیا گیا ہے جو انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں کے اتحاد نے انہیں بھیجا ہے جس میں شہری آزادیوں کی امریکن یونین ، ایمنسٹی انٹرنیشنل اور دیگر تنظیمیں شامل ہیں ۔ اتحاد نے اپنے خط میں خاص طور پر امریکی امدادی رضا کار وارن ونسٹن اور اٹلی کے رضا کار جیوانی لوپورٹو کا ذکر کیا جو جنوری میں پاک افغان سرحد پر القاعدہ کے ٹھکانے پر ڈرون حملوں میں ہلاک کیا۔ان دو افراد کو القاعدہ کے دہشتگردوں نے یرغمال بنا رکھا تھا لیکن ان کو بچانے کیلئے احتیاط نہ کی گئی ۔ انسانی حقوق تنظیموں کے اتحاد نے اوبامہ انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ اس کے علاوہ بھی تحقیقات ہونی چاہیے کہ کہاں کہاں کتنے معصوم شہری ڈرو ن حملوں میں ہلاک یا زخمی ہو ئے جو دراصل دہشتگرد نہیں تھے اور ان کی کتنی املاک کو نقصان پہنچا۔اتحاد نے واضح کیا کہ یہ تحقیقات شفاف ہونی چاہیے اور پھر رپورٹ منظر عام پر آنی چاہیے ۔ اتحاد نے پاکستان اور یمن میں 2009ء اور 2014کیدوران حملوں کے کم از کم دس اور کیسز کی نشاندہی کی ہے جن میں ہر حملے سے دہشتگردوں کے علاوہ اوسطاََ چار سے چوبیس معصوم افراد بھی نشانہ بنے جن میں زیادہ تعداد بچوں کی تھی ۔

مزید : علاقائی