برطانیہ:ویزہ افسروں کے طالبعلموں سے غیر ضروری سوالات پوچھنے پر پابندی

برطانیہ:ویزہ افسروں کے طالبعلموں سے غیر ضروری سوالات پوچھنے پر پابندی

لاہور(نامہ نگار خصوصی )پاکستانی طالبعلم نے برطانوی عدالت سے اپنا کیس جیت لیا،برطانوی عدالت نے ویزہ افسروں کو تعلیم کے حصول کے لئے برطانیہ آنے والے طالب علموں سے غیر ضروری سوالات پوچھنے سے روک دیا،عدالت نے فیصلے میں کہا ہے کہ ویزہ افسران کے قانون سے ہٹ کر کئے گئے فیصلوں کی کوئی قانونی حیثیت نہیں۔مانچسٹر ہائیکورٹ کے جج میک کلاسکی نے یہ حکم پاکستانی طالبعلم عدنان مشتاق کی درخواست پر جاری کیا جس کی طرف سے بیرسٹر امجد ملک پیش ہوئے تھے ۔پاکستان میں بیرسٹر امجد ملک کے ترجمان اظہر صدیق ایڈووکیٹ میڈیا کو بتایا کہ درخواست گزار کی طرف سے مانچسٹر ہائی کورٹ میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ طالبعلم کے تعلیمی پوائنٹس اور دستاویزات مکمل ہونے کے باوجود ویزہ افسر نے اپنا اطمینان نہ ہونے پر اسکی ویزہ کی درخواست کسی قانونی جواز کے بغیرمسترد کر دی۔انہوں نے کہا کہ ویزہ افسر کا فیصلہ ہوم آفس کی پالیسی سے متصادم،غیر منصفانہ اورغیر مساوی ہے۔عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ جاری کیا ہے کہ ویزہ افسران کے قانون سے ہٹ کر کئے گئے فیصلوں کی کوئی قانونی حیثیت نہیں اور یہ کہ غریب ممالک سے آنے والے طالبعلم یہ حق رکھتے ہیں کہ ان کا موقف درست طریقے سے سنا اور سمجھا جائے۔

مزید : علاقائی