روشنیوں کا شہر کراچی ایک مرتبہ پھر آنسوؤں میں ڈوب گیا،علامہ فرحت شاہ

روشنیوں کا شہر کراچی ایک مرتبہ پھر آنسوؤں میں ڈوب گیا،علامہ فرحت شاہ

 لاہور( نمائندہ خصوصی) کراچی کی صورتحال پرمنہاج القرآن علماء کونسل کی ایگزیکٹو کا ہنگامی اجلاس مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاؤن میں ہوا ۔اجلاس کی صدارت مرکزی ناظم علماء کونسل علامہ فرحت حسین شاہ نے کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ فرحت حسین شاہ نے کہا کہ روشنیوں کا شہر کراچی ایک بار پھر آنسوؤں،آہوں،سسکیوں میں ڈوب گیا۔بے گناہوں کی جانیں لینے والے جہنم کا ایندھن اور انسان نما بھیڑیے ہیں۔پر امن ،تعلیم یافتہ اسماعیلی کمیونٹی کو دہشت گردی کا نشانہ بنانے والے انسان کہلانے کے مستحق بھی نہیں ہیں ۔کراچی میں قیامت صغری ٹوٹ پڑی مگر وفاقی و صوبائی حکومتوں کو پھر بھی شرم نہیں آئی دہشت گردوں نے کراچی کا امن ایک بار پھر کرچی کرچی کر دیا مگر مجال ہے جو بے حس اور ہٹ دھرم حکمران اپنی نااہلی اور نالائقی کو تسلیم کرتے ہوئے اپنے عہدوں سے استعفےٰ دیں ۔منہاج القرآن علما کونسل کے ہنگامی اجلاس میں علامہ محمد حسین آزاد،علامہ امداد اللہ قادری،علامہ میر آصف اکبر،علامہ پیر عثمان سیالوی،علامہ ممتاز صدیقی،علامہ لطیف مدنی و دیگر بھی موجود تھے ۔علامہ سید فرحت حسین شاہ نے کہا کہ اس المناک واقعے نے ایک بار پھر ملک کو داخلی اور خارجی سطح پر بڑی آزمائش میں مبتلا کر دیا ہے ۔حکومت عوام کو تحفظ دینے میں ناکام ہو چکی ہے ،ملک بھر میں اور خصوصاً کراچی میں امن و امان کی صورتحال بے حد تشویشناک ہے ۔۔منہاج القرآن علما کونسل جاں بحق ہونے والوں کے غم میں برابر کی شریک ہے اور ہم سمجھتے ہیں کہ انسانی جانوں کی حرمت سے زیادہ کسی بات کی اہمیت نہیں ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1