امریکہ، بھارت اور ان کے اتحادی سی پیک کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں: دفاع پاکستان کونسل

امریکہ، بھارت اور ان کے اتحادی سی پیک کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں: دفاع ...

  

لاہور( خصوصی رپورٹ )دفاع پاکستان کونسل میں شامل جماعتوں کے مرکزی قائدین نے یکجہتی کشمیر کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت سے دوستی اور بیک چینل ڈپلومیسی کے ذریعہ جدوجہد آزادی کی تحریک میں خنجر گھونپا جارہا ہے۔حکمرانوں نے قائداعظم کی کشمیر پالیسی کو ترک کر دیا۔افغانستان میں بھارتی فوج داخل کر کے مشرق و مغرب سے پاکستان کو سینڈوچ بنانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ امریکہ، بھارت اور ان کے اتحادی سی پیک کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔ مولاناعبدالغفور حیدری اور گوادرمیں مزدوروں پر حملے انہی سازشوں کا حصہ ہیں۔ حافظ محمد سعید کی نظربندی کا مسئلہ عوامی عدالت میں بھی لے جائیں گے۔کشمیریوں سے اصل یکجہتی تحریک میں عملی تعاون کرنا ہے۔ اسلام آباد، پشاور، کوئٹہ اور دیگر شہروں میں بھی جلد بڑے پروگرام ہوں گے۔ کشمیری لازوال قربانیوں کی داستان رقم کر رہے ہیں۔ ان کی مددوحمایت کیلئے سڑکوں پر نکلنا ہو گا۔ کلبھوشن کی پھانسی کے مسئلہ پر بیرونی دباؤ قبول نہ کیا جائے۔ مقامی ہوٹل میں ہونے والی کانفرنس سے دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق، پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی، لیاقت بلوچ،محمد علی درانی، اجمل خان وزیر، خرم نواز گنڈا پور، مولانا فضل الرحمن خلیل،مولانا امیر حمزہ،قاری محمد یعقوب شیخ ،علامہ ابتسام الہیٰ ظہیر،حافظ خالد ولید،حافظ عبدالغفار روپڑی ، مولانا عبدالرؤف فاروقی ،شاہ عبدالعزیز ،ابوالہاشم ربانی،شیخ نعیم بادشاہ، قاری ضمیر احمد منصوری ،نذیر احمد خان و دیگر نے خطاب کیا۔ قبل ازیں مرکز القادسیہ چوبرجی میں دفاع پاکستان کونسل کے قائدین کا اجلاس بھی ہوا جس میں جمعیت علماء پاکستان کے صد ر پیر اعجاز ہاشمی نے بھی شرکت کی۔اس موقع پرقائدین نے اتفاق رائے سے شیخ نعیم بادشاہ کو ڈی پی سی لاہور کا کوآرڈینٹرمقرر کیا ۔اجلاس میں مولانا عبدالغفور حیدری اور گوادر میں مزدوروں پر حملے کی بھی شدید مذمت کی گئی اور سانحہ ماڈ ل ٹاؤن کے مجرموں کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا گیا۔دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق نے اپنے خطاب میں کہاکہ امریکہ اور اس کے اتحادی سی پیک کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔ ہماری تاریخ نظربندیوں سے بھری پڑی ہے۔ حافظ محمد سعید نے سال 2017ء کو کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کے نام کیا تو انہیں گرفتار کر لیا گیا۔ انہیں نظربند کر کے لاہور ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ کی بھی توہین کی گئی جو جماعۃالدعوۃ اور اس کی قیادت کے حق میں واضح فیصلے دے چکی ہیں۔ حکمران کلبھوشن کو دہشت گرد کہنے کیلئے تیار نہیں ہیں۔ جدوجہد آزادی کشمیر کی مددوحمایت کے جرم میں حافظ محمد سعید و دیگر کو نظربندکرنا کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی کمر میں چھرا گھونپنے کے مترادف ہے۔ 11جون کو اسلام آباد میں بڑا سیمینار ہو گا۔ اسی طرح پشاور ، بلوچستان اور دیگر شہروں میں بھی بڑے پروگرام ہوں گے۔ ہم تمام مذہبی وسیاسی قیادت کو دعوت دیں گے۔ انہوں نے کہاکہ اسلام پسندوں کیخلاف دہشت گردی کا پروپیگنڈا کیا جارہا ہے۔دفاع پاکستان کونسل استحکام پاکستان کیلئے جدوجہد کر رہی ہے۔ تحفظ نظریہ پاکستان کیلئے بھرپور جدوجہد کی ضرورت ہے۔ اس ملک میں لبرل ازم کی باتیں کی جارہی ہیں اور قادیانیوں کے نام پر یونیورسٹیوں کے شعبہ جات منسوب کئے جارہے ہیں۔جماعۃالدعوۃ سیاسی امور کے سربراہ پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی نے کہاکہ بھارت سے دوستی والے رویہ نے مسئلہ کشمیر کو بہت نقصان پہنچایا ہے۔ حکمران تحریک آزادی کشمیر کی مدد کرنے میں سنجیدہ نہیں ہیں۔قائداعظم کی کشمیر پالیسی کو ترک کر دیا گیا ہے۔ جدوجہد آزادی کشمیر کو دہشت گردی قرار دیاجارہا ہے۔ حافظ محمد سعید کو کشمیریوں کی مدد کے جرم میں نظربند کیا گیا۔ کشمیری لازوال قربانیوں کی داستانیں رقم کر رہے ہیں۔ وہ پاکستانی پرچم میں اپنے بیٹوں کو دفن کر رہے ہیں ا ور حکمران تحریک آزادی کشمیر کو دہشت گردی سمجھتے ہیں۔ کشمیریوں سے اصل یکجہتی ان کے خون سے خون ملانااور ان کی مددکرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ حکمران کوئی شرمندگی محسوس کئے بغیر ہندوستان سے بیک چینل ڈپلومیسی کی باتیں کر رہے ہیں ۔ جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا کہ کشمیریوں نے بھارتی بالا دستی کو قبول نہیں کیا۔ ان کی لازوال قربانیوں اور الیکشن بائیکاٹ نے ثابت کر دیا کہ وہ آزادی چاہتے ہیں۔ حکومت بیک چینل ڈپلومیسی کے ذریعہ کشمیریوں کی تحریک میں خنجر گھونپ رہی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -