میاں صاحب کی سوچ امریکہ جیسی،ہم خطے میں جنگ نہیں ہونے دینگے :زرداری

میاں صاحب کی سوچ امریکہ جیسی،ہم خطے میں جنگ نہیں ہونے دینگے :زرداری

  

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں ) پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اورسابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے کہا ہے اس بار الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے، ہر حلقے میں نتائج سامنے آنے تک پولنگ اسٹیشنز سے نہیں ہٹیں گے، پیپلز پارٹی نے پختونوں کو شناخت دی، این ایف سی ایوارڈ بھی پیپلز پارٹی نے دیا، فاٹا کو کے پی کے کا حصہ بھی ہم ہی بنائیں گے، سی پیک کا خواب میں نے پختونوں اور بلو چو ں کیلئے دیکھا جسے اسلام آباد منتقل کر دیا گیا ، تاہم ہم اس خواب کو ضرور مکمل کریں گے ،کے پی کے میں کیا آگ لگی ہے،کم عقل دوست دیکھ نہیں سکتے ، ہمارے دور میں افغانستان میں امن تھا ، تعلقات بھی اچھے تھے، ہمسائے ہمارے دوست ہیں اور ان سے دوستی ہونی چاہیے، نو ا ز شریف کی سوچ امریکہ جیسی ہے کہ خطے میں پہلے گرمی پیدا کی جاتی ہے اور پھر جنگیں کرائی جاتی ہیں، ہم ایسا نہیں ہونے دیں گے۔ پشاور میں پارٹی کارکنوں سے خطاب میں انکا کہنا تھا پیپلز پارٹی نے عوام کو حقوق دیئے،کے پی کے میں لوگ بے گھر ہیں، لوگوں کو جیلوں میں ڈالا جا رہا ہے اور شناختی کارڈز روکے جا رہے ہیں جبکہ کراچی جہاں پیپلز پارٹی کی حکومت ہے پختونوں کا سب سے بڑا شہر ہے، وعدہ کرتا ہوں اگر دوبارہ موقع ملا تو جس طرح پختونوں کو خیبر پختونخوا کا تحفہ دیا اسی طرح فاٹا کو خیبر پختونخوا سے ملا ئیں گے۔ لوگ کہتے تھے 3 ماہ میں لوڈ شیڈنگ ختم نہ ہوئی توان کا نام بدل دینا، آج عوام لوڈ شیڈ نگ ختم کرنے کے دعویدار کا نیا نام پوچھ رہے ہیں۔ پچھلی دفعہ میں نے انتخابی مہم نہیں چلائی کیونکہ ہر چیز کا وقت ہوتا ہے، یہ آخری سال ہے جس میں نکلا ہوں اور پاکستان کے کونے کونے میں جا کر بھرپور انتخابی مہم چلا ؤ ں گا، پاکستان میں زندگی ڈرکر نہیں جی سکتے، سیاست بڑھ چڑھ کریں گے چاہے دنیا کی ہو یا ملک کی، پیپلزپارٹی کمزور نہیں کیونکہ شہید بھٹو نے اتنی طاقت دی ہے کہ ہم دشمنوں کی آنکھ میں آنکھ ڈال کر دیکھ سکتے ہیں۔ موجودہ حکومت سے معاشی حالات ٹھیک نہیں ہو رہے، نئے کرنسی نوٹ چھاپے جا رہے ہیں اور قرض پر قرض لیے جا رہے ہیں، یہ سمجھتے ہیں مغل سلطنت ہمیشہ قائم رہے گی۔ حکمران غلط فہمی میں ہیں کہ پنجاب میں جنگلے، ٹرینیں اور راستے بنانے سے ووٹ ملیں گے اور وہ حکومت بنا لیں گے۔

مزید :

صفحہ اول -