رمضان المبارک سے قبل مہنگائی نے دستک دے دی، ٹماٹر کی قیمتوں میں 16.24فیصد اضافہ

رمضان المبارک سے قبل مہنگائی نے دستک دے دی، ٹماٹر کی قیمتوں میں 16.24فیصد اضافہ

  

ملتان(جنرل رپورٹر) ملک میں ہفتہ وار افراط زر کی شرح میں کمی کا تسلسل گزشتہ ہفتے ٹوٹ گیا اور6 ہفتے کے بعد حساس قیمتوں کے اشاریے پر مبنی اضافی ریٹ میں ہفتہ وار بنیادوں پر 0.21 فیصد کا اضافہ ہوگیا جس میں بڑا کردار ایک بار پھر ٹماٹر اور آلو کے ساتھ دالوں کی قیمتوں میں ہونے والا اضافہ ہے جو رمضان سے قبل مہنگائی کی دستک ہے۔پاکستان بیورو شماریات (پی بی ایس) سے جاری کردہ ہفتہ وار اعدادوشمار کے مطابق اس ہفتے کے دوران 17 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، سب سے زیادہ اضافہ ٹماٹر کی قیمتوں میں 16.24 فیصد کا ہوا جس کے نتیجے ملک میں ٹماٹر کے اوسط نرخ 32.78 روپے فی کلوگرام ہوگئے جو ایک ہفتے قبل28.20 روپے فی کلوگرام تھے، نہانے کا صابن3.60 فیصد بڑھ کر 40.53 روپے فی کس، ا?لو 3.38 فیصد بڑھ کر33.67 روپے فی کلو، زندہ برائلرمرغی3.02فیصد کے اضافے سے 158.39 روپے فی کلوگرام، کیلے 1.83 فیصد بڑھ کر 86.27 روپے فی درجن، شرٹنگ 1.16 فیصد کے اضافے سے 167.18 روپے فی میٹر اور باسمتی ٹوٹا چاول0.98 فیصد بڑھ کر 68.14 روپے فی کلوگرام ہو گئے۔اس کے علاوہ دال مونگ 0.94 فیصد، دال ماش0.77 فیصد، دال مسور0.40 فیصد، سرخ مرچ پسی ہوئی کھلی 0.33 فیصد، دال چنا،0.20 فیصد، لانگ کلاتھ0.14 فیصد، گڑ0.11 فیصد، سرسوں کا تیل 0.06 فیصد، بکرے کا گوشت0.02 فیصد اور ویجیٹیبل گھی (کھلا/ تھیلی) کے نرخ اوسطاً0.01 فیصد بڑھے۔قبل ازیں 24 مارچ کوختم ہونے والے ہفتے میں آخری بار 1.19 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیاگیا جب ملک میں ٹماٹر کی قیمتیں 100روپے فی کلو گرام سے بھی تجاوز کر گئی تھیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -