اگر بچپن میں آپ کے ساتھ یہ کام ہو جائے تو ساری عمر آپ کی سب سے اہم چیز خراب ہو جاتی ہے، تحقیق میں حیران کن انکشاف

اگر بچپن میں آپ کے ساتھ یہ کام ہو جائے تو ساری عمر آپ کی سب سے اہم چیز خراب ہو ...

  

لندن (نیوز ڈیسک) بچپن میں بدسلوکی اور زیادتی کا نشانہ بننے والے بچے بڑے ہوتے ہیں تو طرح طرح کے نفسیاتی مسائل کے شکار ہو جاتے ہیں، لیکن پہلی بار سائنسدانوں نے بچپن کے مسائل کو نظام انہضام کی بیماریوں کے مجموعے آئی بی ایس (Irritable Bowl Syndrome) سے بھی جوڑ دیا ہے۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ ہمارے دماغ اور آنتوں کے درمیان گہرا تعلق پایا جاتا ہے۔ جو افراد بچپن میں برے سلوک کا سامنا کرتے ہیں ان کے دماغی فنکشن میں مخصوص طرح کی مستقل تبدیلیاں ہوجاتی ہیں جو دیگر مسائل کے علاوہ نظام انہظام کی بیماریوں کا سبب بھی بنتی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ آئی بی ایس کے شکار افراد میں آنتوں کی عصبی رگوں اور عضلات کے فنکشن میں خرابی کی وجہ سے پیٹ میں شدید درد کی کیفیت پیدا ہوتی ہے ۔ اسہال، قے، قبض اور اپھارہ جیسے مسائل بھی آئی بی ایس کا حصہ ہیں۔ ان تمام مسائل کا تعلق بچپن کے نفسیاتی مسائل کی وجہ سے پیدا ہونے والے عصبی رگوں اور عضلات کے مسائل کے ساتھ پہلی بار منسلک کیا گیا ہے۔ یونیورسٹی آف کیلیفورنیا لاس اینجلس کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اس بات کے واضح شواہد موجو د ہیں کہ جن افراد کو بچپن میں ناموافق ماحول اور برے سلوک کا سامنا کرنا پڑتا ہے ان کے دماغ کے سٹرکچر اور فنکشن میں آنے والی تبدیلیاں بعدازاں آئی بی ایس کا سبب بن سکتی ہیں۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ روزمرہ غذا میں تبدیلی، فائبر کی مقدار میں تبدیلی، باقاعدہ ورزش اور ذہنی دباﺅ میں کمی لاکر آئی بی ایس کے مسئلے کو کسی حد تک کم کیا جاسکتا ہے۔ یہ تحقیق سائنسی جریدے ’مائیکرو بائیو می‘ میں شائع کی گئی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -