حکومت پنجاب نے 1900 ارب روپے کا ضمنی بجٹ پیش کردیا گیا

حکومت پنجاب نے 1900 ارب روپے کا ضمنی بجٹ پیش کردیا گیا
حکومت پنجاب نے 1900 ارب روپے کا ضمنی بجٹ پیش کردیا گیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) صوبہ پنجاب کی وزیر خزانہ ڈاکٹرعائشہ غوث پاشا نے پنجاب اسمبلی میں ضمنی بجٹ برائے مالی سال 2017-18پیش کردیا جس کا حجم 1900 ارب روپے ہے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب نے پورے سال کا بجٹ پیش کرنے کی بجائے چار ماہ کا ضمنی بجٹ پیش کردیا،بجٹ تقریر کے موقع پر

صوبائی وزیر ڈاکٹر عائشہ غوث نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی صوبائی حکومت نے سابقہ ادوار کی طرح عوامی فلاح و بہبود اور ترقی کے شاندار سفر کو جاری رکھا ہے، یقین ہے کہ ترقی کا یہ سفر آئندہ بھی جاری ہے گا اور 2018کے الیکشن میں بھی عوام ایک مرتبہ پھر مسلم لیگ (ن) کی قیادت پر اپنے اعتماد کا اظہار کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ دوسرے صوبوں کے مقابلے میں پنجاب کی کارکردگی 2008سے لے کر ہر گزرتے سال کے ساتھ خوب سے خوب تر ہوتی رہی، موجودہ حکومت نے 2008سے لے کر اب تک ٹیکس وصولی میں 345 فیصد اضافہ کیا ہے جو کہ انتہائی خوش آئند ہے اور یہ وسائل صوبے کے عوام کو بہتر سہولیات کی فراہمی میں استعمال کئے جارہے ہیں۔

بجٹ اجلاس کے دوران اپوزیشن ارکان نے بجٹ کی کاپیاں پھاڑ ڈالیں اور مسلسل شور مچاتے رہے۔ وزیر خزانہ پنجاب عائشہ غوث کا کہنا تھا کہ ہم عوام کی خدمت کرکے جارہے ہیں، اگلے مالی سال کا بجٹ آئندہ حکومت پیش کرے گی۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور