وفاقی شرعی عدالت میں سودی نظام کیخلاف درخواستیں ، سٹیٹ بینک کے وکیل کا تحریری موقف طلب

وفاقی شرعی عدالت میں سودی نظام کیخلاف درخواستیں ، سٹیٹ بینک کے وکیل کا ...

اسلام آباد(صباح نیوز) وفاقی شرعی عدالت نے سودی نظام کے خلاف درخواستوں کی سماعت 11 جون تک ملتوی کردی ہے۔ چیف جسٹس شرعی عدالت جسٹس شیخ نجم الحسن کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ نے قراردیا کہ پہلے تمام 118فریقین کو نوٹس کی تعمیل کا عمل مکمل کرایا جائے، اس کے بعد پیش نہ ہونے والے فریقین کے مقدمات الگ کرکے باقی مقدمات پر فیصلہ سنادیا جائے گا۔عدالت نے اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ وہ بتائیں گذشتہ دس سال میں سودی نظام کے خاتمے کے حوالے سے کیا اقدامات کئے گئے۔عدالت نے سٹیٹ بینک کے وکیل سے بھی آئندہ سماعت پر تحریری موقف طلب کر لیاہے، عدالت نے اہل تشیع مسلک کے رہنماعلامہ ساجد نقوی کومقدمے میں فریق بننے کی اجازت دے دی۔چیف جسٹس شیخ نجم الحسن کا کہنا تھا کہ ہم نے درخواستوں کاالگ الگ فیصلہ کرنا ہے،عدالت درخواستوں پر فیصلہ سنائے گی عملدرآمد حکومت کا کام ہے، عدالت کوئی قانون سازی نہیں کرسکتی۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...