کوہاٹ ،شکردرہ کے عوام نے وزیر قانون کیخلاف طبل جنگ بجا دیا

کوہاٹ ،شکردرہ کے عوام نے وزیر قانون کیخلاف طبل جنگ بجا دیا

کوہاٹ(بیورو رپورٹ) شکردرہ کے عوام نے صوبائی وزیر قانون کے خلاف طبل جنگ بچادیا‘ آئندہ الیکشن میں امتیاز شاہد قریشی جیسے کرپٹ انسان کو ٹکٹ دیا گیا تو پی ٹی آئی کے خلاف کھڑے ہوں گے اربوں روپے خرچ کرنے کے باوجود شکردرہ کے عوام کو پینے کا پانی نہ مل سکا ‘حکومت کو اربوں روپے گیس وتیل کی مدمیں ملنے والی آمدنی دینے والے علاقہ کے لوگ گیس کی سہولت سے محروم ہیں وزیر موصوف نے کمیشن لیکر جائیدادیں بنالیں مگر عوام کی خدمت نہ کرسکے نیب صوبائی وزیر قانون کے خلاف بھی تحقیقات کریں جس نے اربوں روپے ضائع کرڈالا مگر علاقہ عوام بنیادی ضروریات کو ترس رہے ہیں یہ باتیں شکردرہ کے مشران آصف سیف اللہ خان ‘اشتیاق حسین قریشی ‘ جاوید خٹک ‘ملک رشید‘ محمد ارشاد خٹک‘ بصیرخان استاد اور عبدالمنان بنگش نے کوھاٹ پریس کلب میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران کہیں اس موقعہ پر معززین علاقہ کی کثیر تعداد بھی موجود تھی آصف سیف اللہ خان کاکہنا تھا کہ گذشتہ پانچ سالہ دورمیں شکردرہ میں کوئی میگاپراجیکٹ مکمل نہیں کیاگیا بلکہ چشمی واٹر سکیم پر پندرہ کروڑ روپے خرچ کرکے اس منصوبے کو ناکام قرار دے کر لپیٹ لیاگیا اور کمیشن اپنی جیب میں ڈال دی ان پانچ سالوں میں حکومت نے امتیاز شاہد قریشی کو کھربوں روپے فنڈ ملا جسے ضائع کیاگیا ٹرلی پل ‘شکردرہ کالج اور دیگر تمام منصوبے تحال نامکمل پڑے ہیں انہوں نے کہا کہ موصوف نے پانچ سال میں حلقہ نیابت میں نہ کوئی کھمبا لگایااور نہ کوئی گیس میٹر لگایا شکردرہ کے آٹھ کنویں تیل وگیس کی پیداوار دے رہے ہیں مگر علاقہ کی 80 فیصد آبادی گیس کی سہولت سے محروم ہے حالانکہ قانونی طورپر گیس فیلڈ کے پانچ کلومیٹر میں واقع علاقہ کو گیس کی فری سہولت حاصل ہے مگر صوبائی وزیر قانون کو یہ قانونی حق نظر نہ آسکا ان کاکہنا تھا کہ شکردرہ سے دیگر علاقوں کو تیل وگیس سپلائی ہوتی ہے مگر اس علاقہ کی عوام پانی اور گیس سے محروم ہیں جو سراسر زیادتی ہے اشتیاق حسین قریشی کاکہنا تھا کہ ہم نے پی ٹی آئی پر اعتماد کرکے ان کے امیدوار کو کامیاب کروایامگر اس نے خدمت کے بجائے لوٹ مار شروع کردی اور عوام کو سبز باغ دکھاتے رہے اس حوالے سے کئی بار ہم نے احتجاج بھی کیامگر نہ صوبائی حکومت نے کوئی توجہ دی اور نہ صوبائی وزیر قانون نے لہٰذا مجبورا ہم پی ٹی آئی کے بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ شکردرہ کے عوام 98 فیصد بجلی بل ادا کرتے ہیں جس کے بدلے اٹھارہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ ہمارامقدر بن چکی ہے مگر ہمارے ایم پی اے ٹھس سے مس نہ ہوسکے بلکہ وہ سولر لائٹس لگاکرکمیشن حاصل کرنے کے چکر میں پڑے رہے اور تمام پیسہ بیرون ملک منتقل کیا عمران خان اس کے بارے میں بھی تحقیقات کا حکم دیں اور ان سے کمیشن کے ذریعہ حاصل کردہ پیسہ کی واپسی کویقینی بنائیں ان کہنا تھا کہ اگر عمران خان کا یہی نیا پاکستان ہے تو ہم اسکے خلاف اٹھ کھڑے ہوں گے ہم صرف اپناحق مانگتے ہیں انہوں نے اعلان کیا کہ ان اقدامات اورناانصافیوں کے خلاف شکردرہ بھرمیں 13 مئی کو شٹرڈاؤن ہڑتال کی جائیگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...