” قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں ہم نے نوازشریف کے بیان کی مذمت نہیں کی بلکہ۔۔۔“وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے حیران کن بات کہہ دی

” قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں ہم نے نوازشریف کے بیان کی مذمت نہیں کی ...
” قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں ہم نے نوازشریف کے بیان کی مذمت نہیں کی بلکہ۔۔۔“وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے حیران کن بات کہہ دی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیراعظم کے ممبئی حملوں سے متعلق بیان کا ابھی تک ہنگامہ تھما نہیں اور ایسے میں وزیراعظم کاحیران کن انکشاف سامنے آگیا ہے۔

جیونیوز سے گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی حامد میر کاکہناتھاکہ ”پریس کانفرنس کے دوران کہا گیا کہ سیکیورٹی کونسل کے اجلاس میں نوازشریف کے بیان کی مذمت کی گئی ہے لیکن اب آپ اس کی تردید کررہے ہیں تو شاہد خاقان عباسی کاکہناتھاکہ میٹنگ کے بعد جو اعلامیہ جاری کیاگیا، اس میں ہم نے نوازشریف کے بیان کی مذمت نہیں کی بلکہ ہم نے مس رپورٹنگ کی مذمت کی ۔ اس جواب پر وہاں موجود تقریباً تمام ہی صحافی حیران رہ گئے اور پھر ان کو کہاگیا کہ جناب وزیراعظم آپ غلط کہہ رہے ہیں، جو آج اعلامیہ جاری ہوا اس میں نوازشریف کے بیان کی مذمت کی گئی ہے ، مس رپورٹنگ کا تو کہیں ذکر ہی نہیں“۔ ویڈیو دیکھئے

بعد میں پوچھا گیا کہ ابھی بھی آپ نوازشریف کے ساتھ ہیں یا نہیں؟ تو وزیراعظم نے کہاکہ ہاں، میں ان کیساتھ ہوں۔رپورٹس کے مطابق وزیراعظم کاکہناتھاکہ نوازشریف کے بیان کی غلط تشریح کی گئی ،نوازشریف نے ایسی بات نہیں کی کہ بھارت میں ممبئی حملوں کیلئے کسی کو پاکستان سے بھیجا گیا تھا،نوازشریف اس بات پر قائم ہیں کہ اپنی سرزمین کسی دوسرے ملک کیخلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے،

خلائی ہویازمین مخلوق ، ہم الیکشن لڑیں گے اور جیتیں گے ۔

مزید : قومی