فلسطینیوں کا قتل عام ، امریکا نے سلامتی کونسل کی تحقیقات روک دی

فلسطینیوں کا قتل عام ، امریکا نے سلامتی کونسل کی تحقیقات روک دی
فلسطینیوں کا قتل عام ، امریکا نے سلامتی کونسل کی تحقیقات روک دی

  

لندن ( صباح نیوز)غزہ میں فلسطینیوں کے قتل عام کی سلامتی کونسل کی تحقیقات کی درخواست امریکا نے روک دی جس پر برطانیہ نے تشویش کا اظہار کیا ہے جبکہ فرانس نے طاقت کیاستعمال سے گریز کا مطالبہ کردیا۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ترکی نے مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکا اور اسرائیل انسانیت کے خلاف جرائم کے مرتکب ہیں، ترکی ہے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی تنظیم کی خون ریزی روکنے اور ذمے داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کی اپیل کی ہے۔جنوبی افریقانے تل ابیب اور ترکی نے اسرائیل اور امریکا سے سفیر واپس بلالیے، سعودی عرب نے بھی اس اقدام کی شدید مذمت کی ہے۔ادھر کویت نے سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس بلانے کی درخواست کی تاہم اسے منظوری نہ مل سکی، یہ اجلاس اب17مئی ( جمعرات) کو ہوگا۔امریکا غزہ میں اسرائیلی فوجیوں کے ہاتھوں فلسطینیوں کے قتل عام کی اقوام متحدہ کی تحقیقات میں رکاوٹ بن گیا۔سلامتی کونسل نے اسرائیل غزہ سرحد پر شہریوں کے قتل عام کی تحقیقات کامطالبہ کیا تھا، تاہم غزہ میں فلسطینیوں کی نسل کشی پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا اجلاس بھی تاخیر کا شکار ہوگیا۔

مزید : بین الاقوامی