’’ہیلو میں پاک فوج سے میجر عمران بات کر رہا ہوں مجھے آپ کی۔۔۔‘‘ پاکستانیوں کو کیا فون کالز آنا شروع ہو گئیں؟ کسی نے سوچا بھی نہ تھا کہ یہ بھی ہو سکتاہے

’’ہیلو میں پاک فوج سے میجر عمران بات کر رہا ہوں مجھے آپ کی۔۔۔‘‘ ...
’’ہیلو میں پاک فوج سے میجر عمران بات کر رہا ہوں مجھے آپ کی۔۔۔‘‘ پاکستانیوں کو کیا فون کالز آنا شروع ہو گئیں؟ کسی نے سوچا بھی نہ تھا کہ یہ بھی ہو سکتاہے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستانیوں کو بیوقوف بنا کر ان سے پیسے بٹورنے والے جعلساز وں نے اب ’جیتو پاکستان ‘اور بے نظیر انکم سپورٹ فنڈ کا سہارا لینا چھوڑ کر اب ’پاک فوج ‘کا نام لے کر لوٹ مار کی کوشش شروع کر دی ہے ، اسی حوالے سے کچھ لوگوں کو کالز موصول ہوئی ہیں جن میں ایک شخص خود کو پاک فوج کا افسر بتاتاہے اور ذاتی معلومات لینے کی کوشش کرتاہے جس کی آواز سے صاف پتا لگ جاتاہے کہ وہ کوئی افسر نہیں ہے تاہم شریف اور معصوم شہری ایسے لوگوں کے جال میں پھنس جاتے ہیں لیکن اگر آپ کو بھی کبھی اس طرح کی ٹیلیفون کال آئے تو ہرگز معلومات فراہم مت کریں بلکہ قانون نافذکرنے والے ادارے سے فوری رابطہ کریں اور اپنی شکایت فوری طور پر درج کروائیں ۔

تفصیلات کے مطابق  عام شہریوں کی جانب سے دو کالز کی ریکارڈنگ موصول ہوئی ہے جس میں ایک شخص خود کو پاک فوج کا میجر ظاہر کرتاہے اور کہتاہے کہ میں میجر عمران بات کر رہاہوں اور آپ سے کچھ معلومات حاصل کرنے کیلئے رابطہ کیا گیاہے ۔آڈیو ریکارڈنگ کے مطابق وہ شخص کہتاہے کہ آپ سے مردم شماری اور بائیومیٹرک کے بارے میں معلومات لینی تھی جس پر شہری آگے سے کہتاہے کہ جی آپ بتائیں ۔ اس شخص کا کہناتھا کہ یہ جو نمبر استعمال کر ہے ہیں اس کو بائیومیٹرک کروایا ہے جس پر شہری نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ جی میں نے یہ کروایا ہے اور یہ نمبر میرے نام پر ہے ، پھر وہ شخص کہتاہے کہ آپ نے مردم شماری میں اپنا ڈیٹا خود فراہم کیا تھا جس پر شہری آگے سے جواب دیتاہے کہ جی میں نے ہی کیا تھا ۔تاہم وہ شخص اس طرح کے سوالوں کے بعد شہری سے کہتاہے کہ اپنا نام بتائے لیکن شہری حاضر دماغی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہتاہے کہ جب آپ کے پاس میری پوری ڈیٹیل ہے تو میرا نا م بھی ہو گا جس پر وہ شخص آگے سے کہتاہے کہ آپ کا نمبر ریڈ زون میں آ گیاہے جس کے باعث ہم آپ سے معلومات لے رہیں اور یہ کال پاک فوج کی جانب سے ہے ۔

تاہم وہ شہری سے انفارمیشن نکلوانے کی ہر طرح کی کوشش کرتاہے لیکن کامیاب نہیں ہوتاہے جب وہ ڈیٹیل دینے کیلئے زور ڈالنے کی کوشش کرتاہے کہ توشہری نے آگے سے کہا کہ پہلے آپ مجھے بتائیں کہ آپ کی یونٹ کونسی ہے اور آپ کا پاک نمبر کیا ہے جس پر وہ شخص کہتاہے کہ میری یونٹ ’111‘ ہے ، لیکن پاک نمبر کا جواب نہیں دیتا اور مزید معلومات دینے سے انکار کرتاہے ۔ شہری کا کہناتھا کہ آپ مجھے بتائیں کیونکہ میں آپ سے پوچھ سکتاہے کہ آپ کون ہیں کیونکہ آپ ہمارے محافظ ہیں ۔جس پر وہ شخص اپنی شکست تسلیم کرتے ہوئے فرار ہونے میں ہی عافیت جانتاہے ۔

آڈیو کال سنئے:

مزید : ڈیلی بائیٹس