ڈیٹا لیکس سکینڈل کے بعد فیس بک نے 200 ایپس معطل کردیں

ڈیٹا لیکس سکینڈل کے بعد فیس بک نے 200 ایپس معطل کردیں
ڈیٹا لیکس سکینڈل کے بعد فیس بک نے 200 ایپس معطل کردیں

  

لندن (صباح نیوز)ڈیٹا لیکس سکینڈل کے بعد فیس بک نے 200 ایپس معطل کردیں کمپنی نے ایک ہزار سے زائد ایپس کی جانچ پڑتال شروع کردی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق فیس بک کمپنی ڈیٹا لیکس سکینڈل کے بعد انتہائی محتاط ہوگئی اور صارفین کا اعتماد بحال کرنے کے لیے سیکیورٹی کے سخت اقدامات کر رہی ہے،ان ہی اقدامات کے سلسلے میں فیس بک نے ان 200 ایپس کو معطل کردیا جو صارفین کا ڈیٹا بغیر اجازت غیر قانونی طور پر استعمال کر رہی تھیں۔فیس بک کمپنی نے ایک ہزار سے زائد ایپس کی جانچ پڑتال شروع کردی ہے، جس کے دوران یہ معلوم کیا جارہا ہے کہ صارفین کا فیس بک ڈیٹا کون کون غلط جگہ پر استعمال کر رہا ہے؟فیس بک کے مطابق ہر اس ایپ کو بند کیا جارہا ہے جس نے ڈیٹا غیر قانونی طور پر استعمال کیا ہے، ان سلسلے میں اب تک 200 ایپس کا انکشاف ہوا ہے جبکہ اب بھی کئی ایپس کی جانچ پڑتال جاری ہے۔

واضح رہے کہ تمام تحقیقات بانی فیس بک مارک زکر برگ کے مارچ میں صارفین سے کیے گئے وعدے کی بنیاد پر کی جا رہی ہیں تاکہ کیمبرج اینالیٹکا کی وجہ سے صارفین کے بھروسے کو جو دھچکا لگا ہے، اسے دوبارہ بحال کیا جاسکے۔تحقیقاتی ٹیم نہ صرف ایپس پر کڑی نظر رکھ رہی ہے بلکہ صارفین کے دوستوں پر بھی نظر رکھی جارہی ہے تاکہ کسی قسم کی معلومات کے غلط استعمال کو روکا جاسکے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس