اندرون ملک ڈاک ٹیرف میں ڈیڑھ سو فیصد اضافے پرتشویش‘ راولپنڈی چیمبر

اندرون ملک ڈاک ٹیرف میں ڈیڑھ سو فیصد اضافے پرتشویش‘ راولپنڈی چیمبر

راولپنڈی (سٹی رپورٹر) راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر ملک شاہد سلیم نے پاکستان پوسٹ کی جانب سے اندرون ملک ڈاک ٹیرف میں ڈیڑھ سو فیصد تک اضافے پر گہری تشویش ظاہر کی ہے۔ عام خط جس کی ترسیل پر آٹھ روپے چارج ہوتے تھے اب محکمہ ڈاک بیس روپے چارج کر رہا ہے۔ سو گرام پر ٹیرف بیس روپے تھا اب پچاس روپے کر دیا گیا ہے۔ پوسٹ کارڈز کی ترسیل کے چارجز دو روپے سے بڑھا کر پانچ روپے کر دیئے گئے ہیں۔ پرنٹ پیپرز(دو کلو وزن) کی ترسیل کے لیے چارجز جو بیس روپے تھے ان پر تریسٹھ روپے کے چارجز لگا دئیے گئے ہیں جو تین گنا زیادہ ہیں۔صدر چیمبر نے وزیر مواصلات سے مطالبہ کیا ہے کہ چارجز میں فوری کمی کا اعلان کیا جائے۔ تاجر برادری خاص طور پر عام آدمی کو ریلیف دیا جائے۔ ہمیں احساس ہے محکمہ ڈاک کو مالی مشکلات کا سامنا ہے۔ تاہم یکمشت ڈیڑھ سو فیصد اضافہ زیادتی ہے۔ ٹیرف پر نظر ثانی کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیجٹلائزیشن اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے انقلاب کے باوجود ڈاک کی اپنی ایک اہمیت ہے۔کاروباری خطوط، دستاویزات اور تحائف کی ارزاں نرخوں پر ترسیل یقینی بنائی جائے۔ عید کی آمد ہے۔مہنگے ٹیرف سے عید کارڈز کی ترسیل بھی متاثر ہو گی۔

مزید : کامرس