اگر انتقامی سیاست کرنی ہے تو حکومت بھی تیار ہو جائے: مسلم لیگ (ن)

اگر انتقامی سیاست کرنی ہے تو حکومت بھی تیار ہو جائے: مسلم لیگ (ن)

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)مسلم لیگ(ن) کے سینئر نائب صدر شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ا نتقامی کارروائی میں پہلے نیب تھی اب ایف آئی اے کوبھی شامل کرلیاگیا ہے،اگرسیاسی انتقام کی سیاست کھیلنی ہے تو حکومت خودبھی تیارہوجائے،یف آئی اے اور کسی ادارے کوعمران خان کی کرپشن نظر نہیں آتی،عمران خان کے رشتے د اروں کونوازنے کیلئے ایمنسٹی  اسکیم  لائی جا رہی ہے،آئی ایم ایف سے سودا کرلیا،ملک میں بدترین مہنگائی آئے گی اس میں کسی کو شک نہیں ہے،جنھوں نے آٹھ ماہ میں  ملک کا یہ حال کر دیا سوچیں پانچ سال میں کیا کردینگے،ہشت گردی دوبارہ ملک میں شروع ہو گئی  ہے،حکومت کو زحمت نہ ہوئی کہ کوئٹہ دہشت گردی پربات کرتے۔منگل کو مسلم لیگ ن کے رہنماؤں شاہد خاقان عباسی، مریم اورنگزیب اور احسن اقبال نے  پریس کانفرنس کی۔ اس موقع پر شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ امیرمقام کے بیٹے پرتین کروڑروپے سے کم کی کرپشن کاالزام ہے،سیاسی انتقام میں اب نئے باب کااضافہ کیاگیا ہے،انتقامی کارروائی میں پہلے نیب تھی اب ایف آئی اے کوبھی شامل کرلیاگیا ہے،اس کوسیاسی انتقام نہ کہیں تواورکیاکہیں،حکومت نالائق ہے توہم کیا کریں،امیر مقام کے بیٹے کے خلاف این ایچ اے نے کوئی شکایت نہیں کی،ٹھیکہ2009ء میں پیپلزپارٹی کی حکومت میں دیاگیا،یہ کیفیت ہے اس مقدمے کی،اسکوسیاسی انتقام نہ کہیں توکیا کہیں،سڑک کاٹھیکہ سال 2009کاہے شکایت یاتکلیف وزیرکوہے،اگرسیاسی انتقام کی سیاست کرنی ہے تو حکومت خودبھی تیارہوجائے۔ا نہوں نے مزید کہا کہ ہم سب سے زیادہ کرپشن کیخلاف ہیں، کرپشن کہاں ہوئی یہ کوئی نہیں بتارہا،4سال بعد یہ سب کرنابھی غیرقانونی ہے،4سال بعد18سیمپلزلیے گئے جن میں 14بالکل درست ہیں،اگرحکومت ناکام ہو گئی ہے اورآپ نالائق ہیں تواس میں ہماراقصور نہیں،عمران خان کی کرپشن حلال ہے،اگر3کروڑروپے کی شکایت ہے توٹھیکیدارکی بینک گارنٹی سے پیسے نکال لیں،جب ہم نے ایمنسٹی اسکیم دی اس وقت خراب تھی،عمران خان کے رشتے د اروں کونوازنے کیلئے ایمنسٹی اسکیم  اچھی ہے،کرپشن اگر ہے تو بی آر ٹی میں ہے،اداروں کو سیاسی انتقام کیلئے استعمال کیا جارہا ہے، آئی ایم ایف سے سودا کرلیا،ملک میں بدترین مہنگائی آئے گی اس میں کسی کو شک نہیں ہے،عمران خان اور اس کے ہونہار وزیروں کے پاس کوئی جواب ہے،تین ہزار ارب روپے کے ترقیاتی کام مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے کرائے،احتساب کا ادارہ کے پی میں ختم کر دیا گیا اس نے کہا بی آر ٹی میں کرپشن ہے، ایف آئی اے اور کسی ادارے کوعمران خان کی کرپشن نظر نہیں آتی،لوگوں کوٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کیلئے ٹیکس ایمنسٹی سکیم دی جاتی ہے،یہ راستہ تباہی کاہے ماضی میں مشکل سے اس سے نکلے تھے،پہلی بار معاون خصوصی وزارت اطلاعات چلارہا ہے،پرویز خٹک نے کے پی میں کیا کیا،ایک وزیر دواؤں کے پیسے کھا گیا،وزارت اطلاعات چلانے کیلئے ان کو پارٹی میں کوئی ملا نہ حکومت میں،دعا ہی کرسکتے ہیں کہ اللہ انہیں ہدایت دے اور ملک کو ان سے بچائے،حکومت مطمئن ہے،وزیراعظم کہتا ہے حکومت چلانا آسان ہے،آئین کے مطابق حکومت کے پاس 5سال ہیں،ہم ملک میں آمریت نہیں چاہتے،کیا عوام اس حکومت کو پانچ سال دینے کے متحمل ہو سکتے ہیں،جنھوں نے آٹھ ماہ میں یہ حال کر دیا سوچیں پانچ سال میں کیا کردینگے،دہشت گردی دوبارہ ملک میں شروع ہو گئی ہے،حکومت کو زحمت نہ ہوئی کہ کوئٹہ دہشت گردی پربات کرتے،ہرسال ٹیکس چوروں کو موقع نہیں دینا چاہیے۔

مسلم لیگ(ن)

  لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے پارٹی رہنما انجینئر امیر مقام کے صاحبزادے اور کزن کی گرفتاری کی مذمت کی ہے۔اپنے بیان میں شہبازشریف نے وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ نیازی صاحب بڑوں سے سیاسی مخالفتوں کا انتقام بچوں سے لینا کم ظرفی کی انتہا ہوتی ہے، حکومت انتقام میں اندھی،گونگی اور بہری ہوچکی ہے، نیب کے بعد اب ایف آئی اے کو سیاسی انتقام کا ذریعہ بنانا ماضی واپس لے آیا ہے۔انہوں نے کہاکہ امیر مقام کو نوازشریف، شہبازشریف اور (ن) لیگ کا ساتھ دینے کی سزا دی جارہی ہے لیکن امیر مقام اور ان کے بچے ببر شیر ہیں، سیاسی لومڑ ان کا مقابلہ نہیں کرسکتے، سیاسی انتقام کا نشانہ بننے والے شیروں کا وقت آرہا ہے، مخالفین میدان سے بھاگ رہے ہیں۔شہبازشریف کا کہنا تھا کہ اذیت پسند حکمرانوں کو شاید صرف عوام کی چیخیں پسند ہیں، مہنگائی کو قابو نہ کرسکنے والے اپوزیشن کے بچوں کو بھی گرفتار کرنے میں مصروف ہیں، ہم ڈٹ کر حکومت کے ملک اور قوم کے خلاف ظلم کی ترجمانی کرتے رہیں گے، منافقت اور دو نمبری والا نیا پاکستان نہیں چاہیے۔دوسری طرف نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو میں شہباز شریف کا کہنا تھا کہ میں انشا اللہ بجٹ سیشن میں خود موجود ہوں گا۔ اس پر اپنی تقریر کے لئے جماعت کو ہدایات جاری کر دی ہیں۔شہباز شریف نے بتایا کہ اپنی خوشی سے باہر نہیں بیٹھا، جلد عوام میں موجود ہوں گا۔ میڈیکل کے نتائج اللہ کے فضل وکرم سے مثبت ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ملک کی مسائل کی آگ میں جل رہا ہے لیکن حکومت کو اس کا احساس تک نہیں ہے۔ 

شہباز شریف 

مزید : صفحہ اول