کامران مائیکل کیس، تفتیشی افسر کو ریکارڈ پیش کرنے کا حکم

کامران مائیکل کیس، تفتیشی افسر کو ریکارڈ پیش کرنے کا حکم

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائی کورٹ نے سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کے خلاف کیس میں تفتیشی افسر کو بینک اکاﺅنٹس کی دستاویزات رمضان کے بعد پیش کرنے کی مہلت دے دی ہے۔منگل کوسندھ ہائی کورٹ میں چیف جسٹس کی سربراہی میں سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کی گرفتاری کے خلاف درخواست پرسماعت ہوئی،جہاں نیب پراسیکیوٹر نے سماعت کے دوران کہا کہ درخواست کی استدعا میں ترمیم کرکے نئی درخواست دائر کردی ہے۔جس پر عدالت نے تفتیشی افسر سے مکالمہ کتے ہوئے کہا کہ ملزم کے خلاف کیا مواد ہے؟۔تفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ کچھ بینک اکاﺅنٹس کی دستاویزات ہیں لیکن اس وقت موجود نہیں ہیں، رمضان کے بعد تک کی مہلت دے دی جائے۔اس موقع پر چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ نے ریمارکس دیئے کہ تمہیں ایک ہفتہ جیل میں رہنا پڑجائے تو پتہ چلے قید کیا ہوتی ہے،بعدازاں سندھ ہائی کورٹ نے سابق وفاقی وزیر کامران مائیکل کے خلاف درخواست پرسماعت 21 مئی تک کے لیے ملتوی کردی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر