تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے حکومت کی ایمنسٹی سکیم پر بڑاسوال ا ٹھا دیا

تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے حکومت کی ایمنسٹی سکیم پر بڑاسوال ا ٹھا دیا
تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے حکومت کی ایمنسٹی سکیم پر بڑاسوال ا ٹھا دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے کہاہے کہ نوے ارب ڈالرقرضہ لیکر کھایا جا چکاہے ، یہ سب کرکے بھی اگر کچھ نہیں ملا تو ایمنسٹی سکیم سے تین چار سوارب لیکر کیاکرلیا جائیگا ؟

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے ارشادبھٹی نے کہا کہ شہبازشریف کو لندن میں بیٹھے ضمانت مل گئی ہے،آٹھ دس ایسے لوگ ہیں جن کویقینی طور پر اندر ہوناچاہئے لیکن وہ یقینی طور پر باہرہیں۔انہوں نے کہا کہ خودکشی کی بات کرنابری بات ہے ، ہر باری یہی کہا جاتا ہے کہ ہم آخری بار آئی ایم ایف کے پاس جارہے ہیں لیکن کئی مرتبہ چلے گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں سکیمیں آتی ہیں لیکن ٹیکس پورا وصول کیا جاتا ہے لیکن یہاں چھ فیصد دینے کا کہہ کرکہا جارہاہے کہ سارے اثاثے باہر ہی رکھو، آخری بات یہ ہے کہ نوے ارب ڈالرقرضہ لیکر کھایا جا چکاہے ، یہ سب کرکے بھی اگر کچھ نہیں ملا تو ایمنسٹی سکیم سے تین چار سوارب لیکر کیاکرلیا جائیگا ؟

مزید : قومی