وزیر اعظم کی سوچ کا محور و مرکز عوام ہیں،میاں اویس علی

وزیر اعظم کی سوچ کا محور و مرکز عوام ہیں،میاں اویس علی

  

لاہور(پ ر) تحریک انصاف کے ممتاز رہنماء میاں اویس علی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی سوچ اوردوررس اصلاحات کامحورعوام ہیں،وہ لاک ڈاؤن کے حامی نہیں تھے۔وہ عوام کامعیارزندگی بلندکرنے اورانہیں جدیدسہولیات سمیت ضروریات زندگی کی فراہمی کیلئے کوشاں ہیں۔ہمارے قائدعمران خان عوام کودرپیش معاشی دشواریوں پربہت پریشان تھے، حکومت نے باامرمجبوری لاک ڈاؤن میں نرمی کافیصلہ کیامگراس کے باوجود شہری اختیاطی تدابیر پرسمجھوتہ نہ کریں۔اپنے ایک بیان میں میاں اویس علی نے مزید کہا کہ امن بھیک میں نہیں ملتااوردنیا میں کوئی طاقتورکسی کمزورکی عزت نہیں کرتا۔بھارت کواس کی زبان میں سخت جواب دیا جائے،وقت آنے پرپاکستانیوں میں 6ستمبر65ء کاجذبہ بیدار ہو جائے گا۔انہوں نے کہا کہ بھارت کاپاکستان کیخلاف جارحانہ لب ولہجہ اورمذاکرات سے فرار اس کے اتحادیوں امریکہ اوراسرائیل کی ڈکٹیشن کانتیجہ ہے۔اس وقت پاکستان کوبیرونی سے زیادہ اندرونی چیلنجزکاسامنا ہے۔

کرونا سے بچاؤ مہم کامیاب بنانے کیلئے باہمی یکجہتی، نیک نیتی اورسنجیدگی ضروری ہے۔خدارااس نازک وقت میں پوائنٹ سکورنگ اورایک دوسرے کی''ٹانگیں کھینچنے ''سے گریزکیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ متعصب اورانتہاپسندبھارت سے زیادہ اس وقت مقامی شرپسند ملک وقوم کیلئے خطرہ بنے ہوئے ہیں۔ بھارت کی فطرت میں دشمنی ہے،اس سے دوستی کی امید رکھناہمارے مفادمیں نہیں۔انہوں نے کہا کہ دنیا کوحقیقت سے روشناس کرانے کیلئے بھارت کی میڈیاوارکوپروفیشنل اندازسے کاؤنٹرکرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت شدت پسندوں کی جنت اورہرمعاملے میں ''بد'' ہونے کے باوجود الٹا پاکستان کوبدنام کررہا ہے۔بھارتی میڈیا کا پاکستان کیخلاف زہراگلنا سمجھ آتا ہے مگرمغربی میڈیا والے اپنے تعصب سے ہمیں زیادہ پریشان کررہے ہیں۔ بھارت اس کی کواوقات میں رکھنے کیلئے ایک موثراورمنظم روڈمیپ تیارکیا جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -