حلیم عادل کیخلاف جعلی کاغذات پر ہاؤسنگ سوسائیٹیز بنانے کی رپورٹ فائنل

حلیم عادل کیخلاف جعلی کاغذات پر ہاؤسنگ سوسائیٹیز بنانے کی رپورٹ فائنل

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) حلیم عادل شیخ کے گرد اینٹی کرپشن نے گھیرا تنگ کر دیا، پی ٹی آئی رہنما کے خلاف جعلی کاغذات پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے کی فائنل رپورٹ کرلی۔اینٹی کرپشن کے مطابق سپرہائی وے پر جعلی ہاؤسنگ سوسائٹیز کا نیٹ ورک پکڑا، تفتیش کی تو انکشاف ہوا۔کراچی گالف سٹی پراپرٹیز نامی گروپ نے جو حلیم عادل شیخ کی ملکیت ہے 6 ہاوسنگ سکیمیں لانچ کیں، تفتیش کرنے پر پتہ چلا جعلی کاغذات پر سرکاری زمینوں کو پرائیویٹ کر کے دکھایا گیا ہے۔ ریونیو اور سیہون اتھارٹی کے افسران کی ملی بھگت سے سرکاری زمینوں پر قبضہ کیا گیا اور 6 ہاوسنگ سکیم لانچ کی گئیں۔جاری کردہ تمام سکیمیں پام گروپ آف کمپنیز کی ملکیت ہیں جبکہ گالف سٹی پراپرٹیز بھی پام گروپ آف کمپنیز کا ذیلی ادارہ ہے جس کے چیئرمین حلیم عادل شیخ ہیں۔ اینٹی کرپشن رپورٹ کے مطابق حلیم عادل شیخ اربوں روپے مالیت کی سینکڑوں ایکڑ سرکاری زمینوں پر قابض ہیں، انہوں نے سرکاری زمینوں پر غیر قانونی ہاؤسنگ سکیمیں اور پراجیکٹ لانچ کیے۔اینٹی کرپشن رپورٹ کے مطابق تمام سرکاری زمینوں پر پرائیویٹ پراجیکٹ اور سکیمز طارق قریشی نامی شخص نے لانچ کی، طارق قریشی حلیم عادل شیخ کا فرنٹ مین ہے۔ رپورٹ کے مطابق اینٹی کرپشن نے ایس بی سی اے تمام رجسٹرار کو جعلی زمین سے متعلق آگاہ کر دیا ہے۔

حلیم عادل شیخ

مزید :

صفحہ آخر -