پنجاب میں یوم حضرت علیؓ پر مجالس کیلئے 20نکاتی ضابطہ اخلاق جاری

  پنجاب میں یوم حضرت علیؓ پر مجالس کیلئے 20نکاتی ضابطہ اخلاق جاری

  

لاہور(این این آئی)محکمہ داخلہ پنجاب نے یوم حضرت علی کرم اللہ وجہہ پر جلوس نکالنے پر پابندی عائد کرتے ہوئے مجالس کے انعقاد کے لئے 20 نکات پر مشتمل ضابطہ اخلاق جاری کر دیا۔ نوٹیفکیشن کے مطابق 21رمضان المبارک کو یوم حضرت علی کرم اللہ وجہہ کے جلوسوں پر پورے پنجاب میں پابندی عائد ہو گی۔صرف ایک گھنٹے کی مجالس منعقد کروائی جا سکتی ہیں اور انتظامیہ وقت کی پابندی کی ذمہ دار ہو گی،مجلس میں شرکت کرنے والے افراد 6فٹ کا فاصلہ رکھیں گے،مجلس کا انعقاد صاف زمین پر کیا جائے اور قالین نہ بچھائے جائیں،کچی زمین ہونے کی صورت میں قالین بچھائے جا سکیں گے،مجلس کے انعقاد سے پہلے اور بعد میں رش نہ ہو،اگر کھلا میدان امام بارگاہ میں موجود ہے تو امام بارگاہ کے اندر مجلس کرنے کے بجائے کھلے میدان میں اس کا اہتمام کیا جائے۔بچے،بوڑھے اور وہ لوگ جوکھانسی یا بخار کے امراض میں مبتلا ہیں مجلس میں شرکت نہیں کریں گے۔مجلس امام بارگاہ کی حدود کے اندر ہو گی اور اس سے باہر نہیں جایا جائے گا۔امام بارگاہ کی زمین مجلس سے پہلے کلورین سے صاف کی جائے گی۔قالین ہونے کی صورت میں اس پر کلورین سلوشن کا چھڑکا ؤکیا جائے۔شریک افراد کے درمیان اور قطاروں میں 6فٹ کا فاصلہ ہوگا۔ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو ان ہدایات پر عمل کروائے گی۔شرکت کردہ افراد کی آسانی کے لئے زمین پر 6فٹ دوری کے حساب سے بیٹھنے کے لئے نشان لگائے جائیں۔عزادار گھر سے غسل کر کے آئیں۔عزادار ماسک اور گلوز پہن کر آئیں،ہاتھ ملانے اور گلے ملنے سے گریز کریں۔لاؤڈ سپیکر کی منظوری پنجاب ساؤنڈ سسٹم 2015کے حساب سے ہوگی۔امام بارگاہ میں سحری اور افطاری کا انتظام نا کیا جائے۔امام بارگاہ کی انتظامیہ صوبائی گورنمنٹ اور ڈسٹرکٹ گورنمنٹ پولیس کے ساتھ رابطے میں رہے۔

ضابطہ اخلاق

مزید :

صفحہ آخر -