ڈاؤن یونیورسٹی لیب کو رونا کے روزانہ 1000ٹیسٹ کی صلاحیت رکھتی ہے

  ڈاؤن یونیورسٹی لیب کو رونا کے روزانہ 1000ٹیسٹ کی صلاحیت رکھتی ہے

  

کراچی (این این آئی) ڈاؤ یونیورسٹی لیب کرونا کے روزانہ ایک ہزار ٹیسٹ کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے اور روزانہ آنے والے تمام ٹیسٹ سیمپلز بلامعاوضہ لیے جاتے ہیں، اور رپورٹ بھی کسی چارجز کے بغیر جاری کی جاتی ہے، اس سلسلے میں ٹیسٹ کرانے والوں سے کوئی چارجز نہیں لیے جاتے، کورنا ٹیسٹ کی یہ سہولت حکومت ِ سندھ کی جانب سے فراہم کی جارہی ہے، یہ بات ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے ترجمان کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہی گئی ہے، ترجمان کا کہنا ہے کہ ڈاؤ یونیورسٹی اسپتال اوجھا کیمپس میں صبح سویرے پہلے آیئے پہلے پائیے کی بنیاد پر کورونا ٹیسٹ کے 250ٹوکن بلاامتیاز اور بلامعاوضہ فراہم کیئے جاتے ہیں، جبکہ ایمرجنسی میں آنے والے اور محکمہ صحت حکومت سندھ کی مختلف ٹیموں کی جانب سے حاصل کیے گئے سمپلز بھی ڈاؤ لیب کو فراہم کیئے جاتے ہیں، اس ضمن میں کسی مرحلے پر کسی بھی قسم کے سروس چارجز یا کسی بھی نام پر کوئی چارجز لاگو نہیں۔ علاوہ ازیں َاب تک ڈاؤ میں کورونا کے ہزاروں ٹیسٹ کسی بھی قسم کے چارجز کے بغیر کیے گئے ہیں.. ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے ترجمان نے واضح کیا کہ عوام الناس کورونا ٹیسٹ کے سلسلے میں جلدی ٹیسٹ کرانے کے نام پر یا کسی بھی قسم کے سروس چارجز کے نام پر کوئی رقم ادا نہ کریں، ترجمان نے کہا کہ کووڈ نائنٹین کے تمام امور حکومت ِ سندھ کے محکمہ صحت کی جانب سے دیکھے جارہے ہیں، ٹیسٹ کے اخراجات حکومت ِ سندھ کی جانب سے دیئے جارہے ہیں، ترجمان نے کہا کہ ڈاؤ یونیورسٹی عالمی وبا کوڈ نائنٹین کے سلسلے میں اقدامات قومی خدمت کے طور پر انجام دے رہی ہے۔اس سلسلے میں کورونا متاثرین کے بہترین دستیاب علاج کے ساتھ ساتھ تحقیق کے مید ان میں سرگرمِ عمل ہے اور اس کی ایک ریسرچ ٹیم نے کورونا کے علاج کے لیے انٹرا وینس امیونوگلوبلن (وریدی انجیکشن)بھی تیا ر کر لیاہے،جس کے کلینکل ٹرائلز کی اجازت تمام متعلقہ اداروں نے دے دی ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -