مردان پولیس کا آخری عشرے اور عید الفطر کیلئے سیکورٹی پلان تشکیل

مردان پولیس کا آخری عشرے اور عید الفطر کیلئے سیکورٹی پلان تشکیل

  

مردان(بیورورپورٹ) مردان پولیس نے ر مضان المبارک کے آخری عشرے اور عید الفطر کیلئے سکیورٹی پلان تشکیل دے دیا۔ضلع بھر کے داخلی و خارجی راستوں پراضافی ناکہ بندیاں لگادی گئی۔ٹریفک کی روانی کیلئے سپیشل روٹس بھی مقرر کر دیئے گئے۔ڈی پی او سجاد خان نے کرائم و سیکورٹی میٹنگ میں اہم وحساس مقامات،مساجد،تجارتی مراکز اور بازاروں میں سیکورٹی کیلئے پولیس افسران و اہلکار اور لیڈیز پولیس تعینات کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔تفصیلات کے مطابق ڈی پی او آفس میں مردان پولیس کا رمضان المبارک کے آخری عشرے اور عید الفطر کے حوالے سے خصوصی کرائم اور سیکورٹی میٹنگ زیر صدارت ضلعی پولیس سربراہ سجاد خان منعقد ہوا جس میں ایس پی آپریشن وقار عظیم کھرل، سرکل ایس ڈی پی اوز، ایس ایچ اوز اور دیگر پولیس افسران نے شرکت کی۔ میٹنگ میں رمضان المبارک کے آخری عشرے اور عید الفطر کے دوران امن وامان کیلئے سکیورٹی پلان تشکیل دیا گیا،تجارتی مراکز اور بازاروں میں غیر معمولی رش کو کنٹرول کرنے کیلئے سپیشل روٹس مقرر کر دیئے گئے جبکہ ٹریفک پولیس اہلکاروں کی اضافی نفری بھی تعینات کردی گئی۔تمام سرکل ڈی ایس پیز اور ایس ایچ اوز کو اضافی گشت کے علاوہ اہم مقامات،شاہراہوں اورمساجد کیلئے اضافی نفری تعینات کرنے کی خصوصی ہدایات دی گئی۔اہم مقامات بازاروں مارکیٹوں میں سفید پارچاک میں مرد،و خواتین پولیس اہلکاروں کی ڈیوٹیاں لگا دی گئی جبکہ پولیس موبائل پیٹرولنگ میں اضافہ کر دیا گیا۔ضلع بھر کے داخلی و خارجی راستوں پر ناکہ بندیاں سخت کر دی گئی ہیں۔ڈی پی او مردان نے عوام الناس اور تاجر برادری سے اپیل کرتے ہوئے اپنے پیغام میں کہا کہ اپنے اردگرد مشکوک افراد، اشیاء،گاڑی اور بیگ وغیرہ پر نظر رکھیں کسی بھی ہنگامی صورتحال میں فوراً پولیس کو اطلاع دیں تاکہ کوئی ناخوش گوار واقع رونما نہ ہوسکیں۔انہوں نے عوام سے پر زور اپیل کیا کہ چاند رات پر ہوائی فائرنگ سے اجتناب کیا جائے بصورت دیگر ہوائی فائرنگ کرنے والے افراد کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کی جائی گی۔عید کی نماز کیلئے مساجد اور عید گاہوں پر پولیس اہلکار سکیورٹی ڈیوٹی سر انجام دینگے۔معاشرتی جرائم،سٹریٹ کرائم، منشیات فروشی،قمار بازی، تجاوزات، ہوائی فائرنگ اور دیگر سماجی جرائم پر کنٹرول پانے کے لئے انسدادی کاروئیاں روزانہ کی بنیاد پر جاری رہے گی۔ کمسن موٹر سائیکل چلانے,ون ویلنگ کرنے والے،بغیر نمبر پلیٹ اور رجسٹریشن کی گاڑیوں کے خلاف کاروائیاں عمل میں لائی جائیں.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -