جنوبی وزیرستان میں لشمینیا سے سینکڑوں افراد متاثر ادویات نا پید

جنوبی وزیرستان میں لشمینیا سے سینکڑوں افراد متاثر ادویات نا پید

  

 ٹانک(نمائندہ خصوصی)جنوبی وزیرستان میں لشمینیا سے سنکڑوں افراد متاثر ادویات ناپید، محکمہ صحت لمبی تان کر سوگئی، تفصیلات کے مطابق جنوبی وزیرستان کے علاقے سرویکِی، بروند، ماولے خان سرائے،چغملائی، سپلاتوئی، سپینکئی راغزائے کوٹکئی اور سراروغہ کے میں ایک بار پھر لیشمینیا بیماری نے وبائی شکل اختیار کرلی ہے، ماولے خان سرائے اور سپلاتوئی بروند میں 80 کے قریب افراد لیشمینیا مچھر کے کاٹنے سے متاثر ہوئے ہیں واضح رہے کہ پچھلے سال بھی جنوبی وزیرستان کے ان علاقوں میں اپریل مئی کے مہینوں میں لیشمینیا بیماری نے وبائی شکل اختیار کرلی تھی اور بڑے پیمانے پر اسکے لئے کمپین کی گئی تھی، جسکے بعد خیبر پختون خوا حکومت نے 30 ہزار انجیکشن علاقے میں بھجوائے اور ہزاروں مچھر مار سپرے اور مچھردانیاں جنوبی وزیرستان محکمہ صحت کے حوالے کی تھی لیکن مریضوں کو انجیکشنز کے علاوہ نہ تو مچھر دانیاں ملیں اور نہ ہی علاقے میں حفاظتی سپرے کی گئی جس کیوجہ سے اس سال پھر لشمینیا شدت کے ساتھ سر اٹھا رہی ہے۔ قبائلی رہنما ملک اے ڈی محسود نے جنوبی وزیرستان کے ڈپٹی کمشنر، محکمہ صحت کے افسران سے مطالبہ کیا ہے کہ لیشمینیا کا سامان وانہ کے بجائے سرویکِی سراروغہ پہنچایا جائے،اور علاقے میں مچھر مار سپرے کا سلسلہ فوری طور پر شروع کریں تاکہ نہ صرف لشمینیا مچھر کا ہمیشہ کے لئے خاتمہ ممکن بنایا جا سکے بلکہ معصوم بچوں کے چہروں پر بننے والے بدنما داغ سے محفوظ ہوسکیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -