مستبقل مندو بین مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اسلا میو فوبیا کو بین الاقوامی فورمز پر اجاگر کریں: شاہ محمود قریشی 

مستبقل مندو بین مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اسلا میو فوبیا کو بین الاقوامی فورمز ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ نے مستقل مندوبین کو مقبوضہ کشمیر سے کرفیو کے خاتمے اور بھارت میں اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان کو بین الاقوامی فورمز پر اجاگر کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔تفصیل کے مطابق وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کے زیر صدارت وزارت خارجہ میں ویڈیو لنک اجلاس ہوا جس میں کورونا وبائی چیلنج، مقبوضہ جموں وکشمیر کی صورتحال اور ترقی پذیر ممالک کی معاشی بحالی کیلئے وزیراعظم کے ڈیٹ ریلیف اقدام سمیت اہم علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔امریکا میں پاکستان کے سفیر ڈاکٹر اسد مجید، نیویارک میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم اور جنیوا میں پاکستان کے مستقل مندوب خلیل ہاشمی نے بذریعہ ویڈیو لنک اجلاس میں شرکت کی۔ اس کے علاوہ اجلاس میں سیکرٹری خارجہ سہیل محمود اور وزارت خارجہ کے سینئر افسران بھی شریک ہوئے۔اس موقع پر وزیر خارجہ نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اپنے محدود معاشی وسائل کے باوجود کورونا وبا کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے تمام ممکنہ اقدامات اٹھا رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ موجودہ عالمی وبائی چیلنج سے نمٹنے کیلئے پاکستان جیسے ترقی پذیر ممالک کو بہت سی مشکلات کا سامنا ہے۔ ایک طرف ہمیں کورونا وبا کے مزید پھیلاؤ کو روکنا ہے اور دوسری طرف معاشی سرگرمیوں کے تعطل کے باعث پیدا ہونے والے معاشی بحران سے نکلنا ہے۔وزیر خارجہ نے مستقل مندوبین کو کورونا وبا کے پیش نظر مقبوضہ جموں وکشمیر سے بلا جواز کرفیو کے خاتمے اور بھارت میں اسلاموفوبیا کے بڑھتے ہوئے رجحان کو بین الاقوامی فورمز پر اجاگر کرنے کی ہدایت کی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان ورلڈ اکنامک فورم کووڈ ایکشن پلیٹ فارم کے تحت منعقدہ اجلاس میں شرکت کریں گے جہاں وہ کورونا وبائی چیلنج، مقبوضہ جموں وکشمیر کی صورتحال اور کمزور معیشتوں کیلئے ڈیٹ ریلیف کے حوالے سے اظہار خیال کرتے ہوئے عالمی برادری کو پاکستان کے نکتہ نظر سے آگاہ کریں گے۔

شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -